.

جامعہ امام عبدالرحمن میں پہلی سعودی کرونا ویکسین کے کلینکل ٹرائل کی تیاریاں

سعودی قیادت مملکت میں تعلیم اور سائنسی تحقیق کے شعبوں کی بھرپور مدد کررہی ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی امام عبدالرحمن یونیورسٹی نے لیباریٹری تجربات کے بعد پہلی سعودی کرونا ویکسین کے ای کلینیکل ٹرائلز کا پہلا مرحلہ شروع کیا ہے۔

لیباریٹری تجربات سے ثابت ہوگیا تھا کہ سعودی ویکسین موثر ہے۔ سعودی جامعات پہلی کرونا سعودی ویکسین کی تیاری میں ایک دوسرے کی مدد کر رہی ہیں۔ سعودی قیادت مملکت میں تعلیم اور سائنس ریسرچ کی بھرپور مدد کررہی ہے۔

امام عبدالرحمن بن فیصل یونیورسٹی نے برطانیہ اور سویڈن کی سب سے بڑی سپیشلسٹ کمپنی کے ساتھ ویکسین تیار کرنے کا معاہدہ کیا ہے۔ یہ ویکسین عالمی سطح پر تیار کی جائے گی۔ اس سے قبل ویکسین اور دوائیں تیار کرنے والی سٹرازینکا جیسی مشہور کمپنیوں کے ساتھ بھی اس حوالے سے ہوم ورک کیا جا چکا ہے۔

امام عبدالرحمن یونیورسٹی کا کہنا ہے کہ ای کلینیکل ٹرائلز کے پہلے مرحلے میں سعودی کرونا ویکسین مناسب مقدار میں مہیا ہوگی۔ اسی لیے معاہدے کیے گئے ہیں۔ برطانوی کمپنی عالمی معیار کے مطابق اس ویکسین کی پہلی کھیپ تیار کرے گی۔

امام عبدالرحمن یونیورسٹی نے ای کلینیکل ٹرائلز کے لیے ایک سپیشلسٹ کمپنی سے معاہدہ کیا ہے۔ یہ سینٹر ای کلینکل ٹرائلز پروٹوکول کی نگرانی کرے گا اور یونیورسٹی کے سکالرز کے ساتھ مل کر کام کرے گا۔

ای کلینیکل سٹڈیز میں حصہ لینے کے لیے رضاکاروں کا بندوبست کرے گا۔ رضاکاروں میں ویکسین سے پیدا ہونے والے مدافعتی نظام کے تجزیے کے لیے مطلوب ٹیسٹ بھی کرے گا۔ سپیشلسٹ سینٹر فوڈ اینڈ ڈرگ اتھارٹی سے منظوری بھی حاصل کرے گا۔

امام عبدالرحمن یونیورسٹی نے ویکسین کاپی رائٹ کے اندراج کے لیے ایک سپیشلسٹ ایجنسی کی خدمات بھی حاصل کی تھیں۔ سعودی ویکسین ڈاکٹر ایمان المنصور کی قیادت میں تیار کی جارہی ہے۔ اس میں pDNA ٹکنالوجی استعمال کی جا رہی ہے۔