.
کرونا وائرس

کووِڈ-19:ماڈرنا کی ویکسین دونوں انجیکشن لگوانے کے بعد 6 ماہ تک 93 فی صد مؤثر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کی دواسازفرم ماڈرنا نے کہا ہے کہ اس کی کووِڈ-19 کی ویکسین کے دونوں انجیکشن چھے ماہ کے لیے 93 فی صد تک مؤثر رہتے ہیں۔

ماڈرنا نے کلینکی جانچ میں اپنی ویکسین کے 94 فی صد تک مؤثر ہونے کی اطلاع دی تھی۔اس طرح اب اس کے حالیہ نتائج میں کچھ زیادہ فرق نہیں پڑا ہے لیکن اس کے باوجود اس کا کہناہے کہ موسم سرما سے قبل کروناوائرس اور اس کی نئی شکلوں سے مقابلے کے لیے ماڈرنا ویکسین کا ایک اضافی تقویتی انجیکشن لگوانے کی ضرورت ہوگی۔

ماڈرنا اور اس کی حریف فائزر اور بائیو این ٹیک ایس ای دونوں فرمیں ہی کووِڈ-19 سے تحفظ کی اعلیٰ سطح برقرار رکھنے کے لیے تیسری خوراک لگوانے والے پر زور دے رہی ہیں۔

ماڈرنا کے چیف ایگزیکٹوآفیسر (سی ای او) اسٹفین بانسیل کا کہنا ہے کہ کمپنی اس سال 80 کروڑ سے ایک ارب تک خوراکوں سے زیادہ ویکسین تیار نہیں کرے گی اور ہم 2021ء کے لیے بھی مزید آرڈرنہیں لے رہے ہیں۔

ان کا کہنا ہے کہ ’’کووِڈ کی ڈیلٹا شکل ہمارے لیے ایک نمایاں نیا خطرہ ہے اور ہمیں اس سے نمٹنے کے لیے چوکس رہنا ہوگا۔‘‘ویکسین کے اثرات کے ضمن میں ماڈرنا کا ڈیٹا بھی فائزر اوربائیواین ٹیک کے گذشتہ ہفتے جاری کردہ ڈیٹا کے مشابہ ہی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ ان کی ویکسین کی مؤثریت میں ہردوماہ کے بعد قریباً6 فی صدتک کمی واقع ہوگی اوردوسری خوراک کے چھے ماہ کے بعد وہ 84 فی صد تک مؤثر رہے گی۔

ماڈرنا نے اپنے مطالعات کی بنیاد پر دعویٰ کیا ہے کہ اس کی ویکسین کی تین خوراکیں کووِڈ-19 کے نئی شکلوں گیما ، بیٹا اور ڈیلٹا کے مقابلے میں بہت مؤثرہیں اور ان سے ان تینوں نئی شکلوں سے تحفظ کے لیے بھرپورقوت مدافعت پیدا ہوتی ہے۔

واضح رہے کہ ماڈرنا اور فائزر۔بائیواین ٹیک دونوں کی ویکسینیں مسینجر آر این اے (ایم آر این اے)کی ٹیکنالوجی پرمبنی ہیں۔امریکاکی اسٹاک مارکیٹ میں ماڈرنا کے حصص کی قیمتوں میں بدھ کو 3۰6 فی صد کمی واقع ہوئی تھی۔

دریں اثناء فائزرکمپنی اسی ماہ ویکسین کے تیسرے انجیکشن کی منظوری کے لیے کوشاں ہے۔اسرائیل ایسے بعض ممالک نے ضعیف العمر افراد یا امراض کی زد میں آنے والے افراد کواضافی تیسری خوراک لگانے کی مہم شروع کرنے کی منصوبہ بندی کررہے ہیں جبکہ عالمی ادارہ صحت اضافی تقویتی خوراک کی مخالفت کررہا ہے اور اس کا کہنا ہے کہ پہلے کم آمدن والے تمام غریب ممالک کو ویکسین مہیا کی جانا چاہیے اوراس کے بعد اضافی انجیکشن لگایا جائے۔