.

سعودی عرب: عنیزہ کی کھجوریں نیلامی میں فروخت ہونے والا "زرد تیل"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے شہر عنیزہ کی مرکزی منڈی میں صبح صادق کے وقت سنہرے رنگ کی کھجوریں پہنچ جاتی ہیں۔ مقامی باشندے اسے مرکزی پھل کی حیثیت دیتےہیں۔ منڈی میں صبح سویرے ہی آڑھتی اور دلال موجود ہوتے ہیں جہاں کھجوروں کی نیلامی شروع ہوتی ہے۔

اس منڈی میں روزانہ دو لاکھ اسی ہزار کلو گرام کھجور فروخت ہوتی ہے۔

انڈیپنڈنٹ عربیہ میں حالیہ اشاعت میں ایک رپورٹ میں عنیزہ کے سالانہ کھجور میلے کے منتظمین کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ یہ دنیا میں کھجوروں کے سب سے بڑے میلوں میں سے ایک ہوتا ہے۔

سعودی عرب جہاں دنیا بھر میں تیل برآمد کرنے والا سب سے بڑا ملک ہے، ساتھ وہی وہ کھجور پیدا کرنے والے دنیا کے سب سے بڑے ممالک میں سے ایک ہے۔

تصویر بشکریہ انڈیپنڈنٹ عربیہ
تصویر بشکریہ انڈیپنڈنٹ عربیہ

قصیم صوبہ اپنی کھجوروں کے سبب مشہور ہے۔ ایک مقامی دلال کے مطابق یہاں مختلف نوعیت کی کھجوروں کی قیمت پانچ ریال (3 کلو گرام) سے لے کر 700 ریال (3 کلو گرام) تک پہنچی ہوئی ہے۔ گذشتہ برس کھجور کا ایک کارٹن 950 ریال تک میں بھی فروخت کیا گیا۔

اس منڈی سے دنیا کے تقریبا 50 ممالک کو کھجوریں جاتی ہیں۔

عنیزہ کھجور میلے میں برآمدات کے ایک نگران کے مطابق رواں برس امید ہے کہ 60 ممالک کو کھجور برآمد کی جائے گی۔ رواں سال ملک سے باہر بھیجی جانے والی کھجور کے حجم کا اندازہ 20 ہزار ٹن لگایا گیا ہے۔

تصویر بشکریہ انڈیپنڈنٹ عربیہ
تصویر بشکریہ انڈیپنڈنٹ عربیہ
تصویر بشکریہ انڈیپنڈنٹ عربیہ
تصویر بشکریہ انڈیپنڈنٹ عربیہ

اس عہدے دار نے بتایا کہ عنیزہ کی کھجور دنیا میں بہترین ہے۔ یہ مناسب مقدار میں میٹھی ہوتی ہے۔

کھجور کے درختوں اور کھجور سے متعلق سعودی مرکز کے مطابق سعودی عرب کے پاس کھجور کے 3 کروڑ درخت ہیں جن سے سالانہ 14 لاکھ ٹن کھجور پیدا ہوتی ہے۔