.

فرانس:60 سالہ عورت مُردے کے تابوت سے زیورات چُرانے کے الزام میں گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس میں حکام نے ایک عورت کو مُردے کے تابوت سے زیورات چُرانے کے الزام میں گرفتار کرلیا ہے۔

فرانس کے قومی ریڈیو کی رپورٹ کے مطابق 60 سالہ عورت ایک سوگوار خاندان کے ہاں پہنچی اور اہل خانہ کو بتایا کہ وہ متوفیٰ شخص کی دوست تھی۔اہلِ خانہ نے اس کو اکیلے میّت کے پاس چھوڑ دیا اور وہ باقی سب لوگ باہر چلے گئے لیکن جب وہ واپس آئے تو متوفیٰ کے تابوت سے زیورات غائب تھے۔

سوگوارخاندان نے جیولری لاپتا ہونے کے فوری بعد پولیس سے رابطہ کیا۔ابتدائی تحقیقات کے مطابق تعزیت کے لیے آنے والی وہ عورت ہی چوری کی اس واردات میں قصور وار پائی گئی ہے۔

یہ واقعہ فرانس کے شمالی قصبے لیفین میں پیش آیا ہے اور چوری کے الزام میں گرفتار ہونے والی عورت بھی اسی قصبے میں سوگوارخاندان کے محلے ہی میں رہتی ہے۔

پولیس نے اس عورت کوحراست میں لینے کے بعد اس کے سامان کی تلاشی لی تو اس سے ایک پرس برآمد ہوا تھا۔یہ بھی اسی سوگوار خاندان کے گھر سے 24 اگست کو چُرایا گیا تھااور اسی روز میّت سے زیورات اتارے گئے تھے۔

پولیس کو تلاشی کے دوران سوگوار خاندان کے مکان کے مختلف کمروں تک رسائی کے کوڈ اور بعض ںوٹس بھی ملے ہیں۔ان کوڈ کے ذریعے سوگوار خاندان کے باہر سے آنے والے رشتے دارعام اوقات کے علاوہ بھی گھر میں داخل ہوسکتے تھے۔

پولیس کی اس مبیّنہ چورعورت کے خلاف تحقیقات جاری ہے اور اس کے خلاف اپریل 2022ء میں زیورات چوری کے اس مقدمے کی کارروائی کا آغاز ہوگا۔