بھنگ کا استعمال علمی خرابی کا باعث بنتا ہے: تحقیق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سائنسی جریدے "Adction" میں ایک منظم جائزے میں بتایا گیا ہے کہ بھنگ کا استعمال علمی خرابیوں کا باعث بنتا ہے جو استعمال کی مدت کے بعد بھی برقرار رہ سکتا ہے۔

کینیڈا کے زیرقیادت اس جائزے نے 43,000 سے زیادہ شرکاء کے ساتھ 10 بڑے سائنسی مطالعات کے مشترکہ نتائج حاصل کیے ہیں۔

تحقیق سے پتا چلا ہے کہ بھنگ کا استعمال چھوٹے سے درمیانے درجے کی علمی خرابیوں کا باعث بنتا ہے۔ علمی عمل کی ایک حد میں جس میں فیصلے کرنے کی صلاحیت، نامناسب ردعمل کو دبانا، پڑھنے اور سننے کے ذریعے سیکھنا، پڑھنےیا سنتے ہوئے مواد کو یاد رکھنے کی صلاحیت اور دماغی کاموں کو مکمل کرنے میں مشکلات پیش آسکتی ہیں۔

یہ شدید خرابیاں بھنگ کے استعمال کے دستاویزی اثرات کی عکاسی کرتی ہیں جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ اس کے مضر اثرات استعمال کے دوران شروع ہوتے ہیں اور اس کے بعد بھی جاری رہتے ہیں۔

محققین نے وضاحت کی کہ مطالعہ کا مقصد بھنگ کے استعمال سے متاثر ہونے والے ادراک کے بہت سے شعبوں کو اجاگر کرنا ہے۔ تحقیق میں کہا گیا ہے کہ بھنگ کے استعمال سے ذہنی ارتکاز کے مسائل ، یاد رکھنے اور سیکھنے والوں کی روزمرہ کی زندگی پر نمایاں اثر پڑ سکتا ہے۔

نوجوانوں میں بھنگ کا استعمال تعلیمی حصول میں کمی کا باعث بن سکتا ہے اور بالغوں میں اس کا استعمال کام پر خراب کارکردگی کا باعث بن سکتا ہے۔

محققین کا کہنا ہے کہ جب بھنگ عام سطح پر یا شدت میں تمباکو نوشی میں استعمال کی جاتی ہے تو یہ نتائج بدتر ہو سکتے ہیں۔

شراب اور نیکوٹین کے بعد بھنگ دنیا میں تیسرا سب سے زیادہ استعمال کیا جانے والا نفسیاتی مادہ ہے جو نوعمروں اور نوجوان بالغوں میں بھنگ کے استعمال کی شرح سب سے زیادہ ہے۔

محققین نے اس بات پر زور دیا کہ کچھ ممالک کے قوانین میں تبدیلیاں جنہوں نے بھنگ کو تمباکو نوشی کو قانونی حیثیت دی ہے۔ یہ تاثر عام ہو رہا ہے کہ کی بھنگ کی مقبولیت بڑھ رہی ہے۔

بھنگ کے استعمال میں شامل علمی خطرات کو سمجھنا ضروری ہے خاص طور پر نوجوان بالغوں میں جن کے دماغ میں اہم ارتقائی تبدیلیاں آتی ہیں۔

نوجوانوں میں بھنگ کا استعمال تعلیمی حصول میں کمی کا باعث بن سکتا ہے، اور بالغوں میں اس کا استعمال کام پر خراب کارکردگی کا باعث بن سکتا ہے۔

محققین کا کہنا ہے کہ جب بھنگ عام سطح پر یا شدت میں تمباکو نوشی کرتے ہیں تو یہ نتائج بدتر ہو سکتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں