امریکا:دوشیزہ نے قاسم سلیمانی کے قتل کے انتقام میں ’آشنا‘مرد کو چاقوگھونپ دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکا میں ایک دوشیزہ نے ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب کی القدس فورس کے سابق کمانڈر قاسم سلیمانی کی عراق میں ڈرون حملے میں ہلاکت کا بدلہ لینے کے لیے اپنے ’آشنا‘مرد کوبالمشافہہ ملاقات کا جھانسا دے کر چاقوگھونپ دیا ہے۔

پولیس نے بتایا ہے کہ اس ایرانی عورت کی مضروب سے آن لائن شناسائی ہوئی تھی۔کلاس ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق 21 سالہ نِکا نکوبن پر اقدام قتل،مہلک ہتھیار اٹھانے اور چوری کے الزامات عاید کیے گئے ہیں۔

ہینڈرسن پولیس نے گرفتاری کی رپورٹ میں لکھا ہے کہ نکوبن اور اس شخص کی ملاقات ایک ڈیٹنگ ویب سائٹ پر آن لائن ہوئی تھی۔اس کے بعد یہ جوڑا 5 مارچ کو سن سیٹ اسٹیشن ہوٹل میں ملنے پر رضامند ہوا اور انھوں نے ایک مشترکہ کمرا کرائے پرلیا تھا۔

پولیس نے بتایا کہ کمرے میں رہتے ہوئے نکوبن نے اس شخص کی آنکھوں پر پٹی باندھ لی۔اس کے بعد اس نے لائٹیں بند کردیں اور کئی منٹ بعد اس شخص کو’’اس کی گردن میں درد محسوس ہوا‘‘۔

پولیس نے اپنی رپورٹ میں لکھا ہے کہ نکوبن نے مبیّنہ طور پراس شخص کی گردن میں چاقوگھونپ دیا تھا۔اس کا مقصد قاسم سلیمانی کے قتل کا بدلہ لینا تھا۔

اس شخص نے زخمی ہونے کے بعد نکوبن کودھکا دے کرپیچھے ہٹا دیا تھااور911 پر کال کرنے کے لیے کمرے سے باہر بھاگ گیا تھا۔اس کے بعد نکوبن بھی کمرے سے باہر بھاگی اور ہوٹل کے ایک ملازم کو بتایا کہ اس نے ابھی ایک شخص کو چاقو گھونپ دیاہے۔

نکوبن نے ایک تفتیش کار کو بتایا کہ وہ انتقام لینا چاہتی تھی۔اس نے’’گریوڈگر‘‘نامی گانا سنا تھا۔اس گانے نے انتقام لینے کے لیے اس کی حوصلہ افزائی کی تھی‘‘۔لاس ویگاس ریویوجرنل کی رپورٹ کے مطابق مضروب شخص کی موجودہ حالت کے بارے میں کچھ معلوم نہیں۔

اخبار نے بتایا کہ نکوبن کو24 مارچ کو ابتدائی سماعت کے لیے عدالت میں پیش کیا جائے گا۔یہ واضح نہیں کہ آیا اس نے ابھی تک کسی وکیل کی خدمات حاصل کرلی ہیں یا نہیں۔

یادرہے کہ امریکی فورسز نے جنوری 2020ء میں عراق کے دارالحکومت بغداد کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کے نزدیک ایک ڈرون حملے میں القدس فورس کے کمانڈر میجرجنرل قاسم سلیمانی کوہلاک کردیا تھا۔

القدس فورس ایران کی بیرون ملک فوجی کارروائیوں کی ذمہ دار ہے۔مقتول قاسم سلیمانی نے 2017 میں عراق میں داعش کی شکست سے قبل اس کے خلاف لڑنے والے شیعہ نیم فوجی دستوں اور ملیشیاؤں کو منظم کیا تھا اور ان کی ہدایت ورہ نمائی کی وجہ سے عالمی شہرت حاصل کی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں