سعودی عرب: سڑکوں پر کام کرنے والا خاکروب کا بھیک مانگنے کا انداز دیکھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

گذشتہ چند گھنٹوں کے دوران ویڈیو سعودی عرب میں سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی جس میں ایک خاکروب کو سڑکوں پر صفائی کے دوران لوگوں کے سامنے دست سوال دراز کرتے دیکھا گیا ہے۔

تاہم خاکروب کو ناقابل تصور طریقے سے بھیک مانگتے دکھایا گیا ہے جس کا مقصد لوگوں کو دھوکہ دینا اور ممکنہ طور پر زیادہ سے زیادہ رقم اکٹھا کرنا ہے۔

اتوار کو ایک سعودی شہری نے اپنے"ٹک ٹاک" اکاؤنٹ پر ویڈیو پوسٹ کی۔ اس میں خاکروب کو دکھایا گیا جو ٹریفک لائٹ سبز ہونے پر کچرا پھینکتا ہوا نظر آتا ہے۔ پھر گاڑیوں کے رکنے کے بعد واپس لوٹ کر اسے جمع کرتا ہے۔ وہ تھکاوٹ اور مشکلات ظاہر کرنے کے لیے ماتھے کا پسینہ پونچھتے ہوئے کاروں کے قریب ہوتا ہے تاکہ لوگ اس کی مدد کریں۔

اس ویڈیو کلپ میں اس شہر کی وضاحت نہیں کی گئی جہاں یہ واقعہ رونما ہوا، تاہم اسے 5000 لائکس ملے اور تقریباً 4000 نے اسے شیئر کیا۔

بہت سے سوشل میڈیا صارفین نے اس رجحان پر اپنے عدم اطمینان کا اظہار کیا حالانکہ یہ مملکت میں خاص طور پر ٹریفک لائٹس پر خیرات مانگنا ممنوع ہے۔

قابل ذکر ہے کہ سعودی عرب میں بھیک مانگنا، اس کی تمام شکلوں اور مظاہر میں ممنوع ہے۔ بھیک مانگنا، بھکاریوں کا انتظام کرنا ، دوسروں کو اس کی ترغیب دینا،ان سے معاہدے کرنا، یا ان کی کسی بھی طرح سے کسی بھی طرح سے مدد کرنا قابل سزا جرم ہے۔ اس جرم پر ایک سال قید اور ایک لاکھ ریال جرمانہ کی سزا مقرر ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں