ماہ صیام کے دوران مسجد حرام میں برقی گاڑیوں سے ڈیڑھ لاکھ زائرین مستفید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی حکومت نے بیت اللہ کی زیارت اور عمرہ کی سعادت کے حصول کے لیے آنےوالے اللہ کے مہمانوں کی آسانی اور سہولت کے لیے ہر ممکن سروسز فراہم کر رکھی ہیں۔ ان خدمات میں بزرگ اور معذور افراد کے لیے برقی گاڑیوں کی سہولت بھی شامل ہے۔ رمضان المبارک 1443ھ کے دوران مسجد حرام میں ڈیڑھ لاکھ زائرین برقی گاڑیوں سے مستفید ہوں گے۔ رمضان المبارک کے دوران مجموعی طورپر 150900 زائرین کو برقی گاڑی کی سہولت فراہم کی جا رہی ہے۔

یہ سروس صدارت عامہ برائے امور حرمین شریفین کی خدمات کی ڈیجیٹل اور تکنیکی تبدیلی کی عکاسی کرتی ہے جو مملکت کے وژن 2030 تک مملکت میں زائرین کے لیے معیاری سروسز مصنوعی ذہانت سےاستفادے کے اہداف کے مطابق ہے۔

مسجد حرام میں اسسٹنٹ ڈائریکٹر برائے سروسز امور اورایجنسی برائے خدمات اور فیلڈ امور،ماحولیاتی تحفظ کے میڈیا کوآرڈینیشن کے نگران منصور المنصوری نے کہا کہ حکومت مسجد الحرام اور اس کے زائرین کی خدمت میں تمام صلاحیتوں اور ٹیکنالوجی کو بروئے کار لانا چاہتی ہے۔

انہوں نےکہا کہ بیت اللہ کے زائرین کے لیے 3000 الیکٹرک گاڑیاں اور 5000 وہیل بارز فراہم کی ہیں تاکہ بزرگ اور خصوصی ضروریات کے حامل افراد اپنی عبادت آسانی کے ساتھ کر سکیں۔ انتظامیہ نے ٹیکنالوجی اور جدید ٹیکنالوجی سمیت جدید سہولیات کے ذریعے زائرین کی ہرممکن مدد کا فیصلہ کیا ہے۔ شہری سمارٹ فونز کے ذریعے ایپلی کیشن کی مدد سے اپنے لیے برقی گاڑیاں بک کراسکتے ہیں۔

المنصوری نے نشاندہی کی کہ الیکٹرک گاڑیوں کے استعمال کرنے والوں کی تعداد ڈیڑھ لاجھ سے زیادہ ہے اور ہاتھ کے ساتھ چلائے جانے والی گاڑیوں کی تعداد 11580 تک پہنچ گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں