سعودی عرب کانیوم میں دوبارہ ہریالی کے لیے 2030 تک 10 کروڑدرخت لگانے کا منصوبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کے جدید شہرنیوم میں دوبارہ ہریالی کے لیے 2030 تک 10 کروڑمقامی درخت، جھاڑیاں اور گھاس لگانے کے نئے منصوبہ پرعمل درآمد شروع کیا جارہا ہے۔

سعوی پریس ایجنسی کے مطابق قومی مرکز برائے سبزہ وہریالی اورانسداد بنجرپن کے تعاون سے شروع کیے گئے اس اقدام میں کم سے کم 15 لاکھ ہیکٹراراضی کو بحال کیا جائے گا۔اس کے علاوہ جنگلی حیات کے مسکنوں کی مرمت اور بنجرشدہ اراضی کی بحالی میں مدد دینا بھی اس منصوبے میں شامل ہوگا۔

نیوم کے چیف ایگزیکٹو آفیسرنظمی النصر نے کہا کہ قدرتی منظرنامے کا تحفظ اور انسانی اور قدرتی رہائش گاہوں کے بقائے باہمی کو یقینی بنانا نیوم کے وژن کا لازمی جزو ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ ایم ای ڈبلیو اے کے تعاون سے نیوم میں دوبارہ ہریالی منصوبہ کا آغازکرکے ہم دنیا کے شاندار قدرتی ماحول کے تحفظ میں اپنا کردارادا کرنے کےلیے اچھی طرح سے کام کررہے ہیں۔

اس اقدام کا آغازالریاض میں منعقدہ بین الاقوامی نمائش اورفورم برائے اراضی بحالی ٹیکنالوجیز میں کیا گیا۔اس کا مقصد سعودی وژن 2030، سعودی سبزاقدام اور مشرقِ اوسط سبزاقدام کی معاونت کرنا ہے۔

قومی مرکزبرائے سبزہ ،ہریالی اورانسداد بنجرپن کے سی ای آراو ڈاکٹرخالدالبوقدرنے کہا کہ ماحولیاتی تحفظ اور نباتات کے رقبے کی ترقی کے لیے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی سرپرستی اور عظیم حمایت بڑے منصوبوں کے آغاز میں ظاہرہورہی ہے۔ان میں بڑے پیمانے پرسعودی سبزاقدام میں 700 ارب ریال(قریباً 186.6 ارب ڈالر)سے زیادہ کی ابتدائی سرمایہ کاری شامل ہے اور علاقائی سطح پرسبزے میں اضافے کا منصوبہ مشرقِ اوسط اقدام شامل ہیں۔

انھوں نے مزیدکہا کہ یہ اقدام معیشت کی ترقی اورتنوع کے مملکت کے منصوبے کی معاونت کرتا ہے۔سعودی سبزاقدام کا مقصد’’سبزمعیشت کی تعمیراور 2060 تک کاربن سے پاک ماحول کے ہدف تک پہنچنے میں اپنا کردارادا کرنا ہے‘‘۔

البوقدر نے وضاحت کی کہ نیوم کی جانب سے شروع کیے گئے نئے اقدام سے ماحولیات کے تحفظ، فطرتی ماحول کوفروغ دینے اوراس کی پائیداری کو یقینی بنانے اور سعودی سبزاقدام کے مقاصد میں براہِ راست حصہ ڈالنے کے مقصد سے کوششوں کی حمایت میں نمایاں اثرات مرتب ہوں گے۔

واضح رہے کہ ماحولیاتی نظام کا تنزل اورحیاتیاتی تنوع کانقصان آج عالمی ماحول کودرپیش چند اہم ترین مسائل ہیں کیونکہ کاربن کے اخراج سے موسمیاتی تبدیلیاں تیزی سے رونما ہورہی ہیں اورقدرتی وسائل تیزی سے معدوم ہورہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں