.

لبنان سے سعودی عرب آنے والوں کے لئے کرونا پابندیوں کا خاتمہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب نے لبنان سے مملکت سعودی عرب آنے والوں پر سے کرونا کے حوالے سے عاید پابندیاں ختم کر دی ہیں۔ اس کا اظہار مشرق وسطیٰ کے ممالک کے لیے سعودی سفیر ولید بن عبداللہ بخاری نے کیا ہے۔

سعودی سفیر نے ایک ٹوئٹ کے ذریعے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ سعودی عرب نے اعلان کیا ہے کہ لبنانی شہری کسی رکاوٹ کے بغیر سعودیہ آ سکیں گے، اب انہیں مملکت آنے سے پہلے لبنان سے باہر چودہ دن تک رکنے کی پابندی کا سامنا نہیں ہو گا۔ ''

ادھر لبنان میں کرونا کے یومیہ مثبت کیسز کی شرح کافی نیچے آ گئی ہے۔ بدھ کے روز لبنان میں صرف 742 نئے کرونا مریض سامنے آئے ہیں۔ اس سے قبل ماہ فروری میں یومیہ بنیادوں پر سامنے آنے والے کرونا کیسز کی تعداد ڈبلیو ایچ او کے مطابق دس ہزار سے بھی تجاوز کر گئی تھی۔ لیکن ان کیسز میں بتدریج میں کمی آ گئی ہے۔

ڈبلیو ایچ او کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق اس جمعرات کے روز تک لبنان میں کرونا کیسز کی اب تک کی مجموعی تعداد 1119461 ہو گئی، ان میں سے کل 10472 افراد کا انتقال ہو گیا۔

سعودی عرب نے ماہ مارچ میں کرونا کی وجہ سے اپنے ہاں عاید پابندیوں کو ختم کر دیا تھا۔ حتی کہ سعودیہ پہنچنے والوں کے لیے بھی منفی پی سی آر ٹیسٹ کا رزلٹ پیش کرنا لازمی نہیں رہا تھا۔

اسی طرح مملکت میں داخل ہونے والوں پر لازمی قرنطینہ کی شرط بھی ختم کر دی گئی، تاہم ہیلتھ انشورنس اب بھی مطلوب ہے۔ البتہ سعودیہ نے بعض ممالک کی طرف سفر پر پابندی برقرار رکھی گئی تھی۔ پابندیوں میں یہ نرمی کرونا کیسز میں کمی کی وجہ سے کی گئی تھی۔

سعودی وزارت صحت کے حال ہی میں جاری کردہ اعداد وشمار کے مطابق حج کے پہلے روز ترویہ کے موقع پر کرونا کیسز صفر ہو گئے۔ یہ اعلان گورنر مکہ اور خادم حرمین شریفین کے مشیر شہزادہ خالد الفیصل نے کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں