معمول سے 10 گنا زیادہ بارش نے پاکستان کوسیلاب میں ڈبودیا: ای ایس اے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

یورپی خلائی ایجنسی (ای ایس اے) نے جمعرات کو بتایا ہے کہ معمول سے 10 گنا زیادہ بارش پاکستان میں تباہ کن سیلاب کا سبب بنی ہے۔ایجنسی نے دریائے سندھ کے بہاؤ سے بنی ایک وسیع جھیل کی سیٹلائٹ تصاویر جاری کی ہیں۔

اقوام متحدہ کے سربراہ انتونیوگوٹیرس کی جانب سے’’سٹیرائیڈزمون سون‘‘قرار دی جانے والی بارشوں نے جون سے اب تک پاکستان میں سیکڑوں افراد کی جان لے لی ہے۔ان کے نتیجے میں شدید سیلاب آیا ہے اور وہ ہزاروں ایکڑ رقبے پر کھڑی فصلوں کوبہا لے گیا ہے۔بارشوں اور سیلاب سے ملک بھر میں دس لاکھ سے زیادہ مکانات کو نقصان پہنچاہے۔ وہ مکمل یا جزوی طور پر تباہ ہوگئے ہیں۔

ای ایس اے نے ایک بیان میں کہا کہ یورپی یونین کے کوپرنیکس سیٹلائٹ کے اعدادوشمار کا خلا سے سیلاب کے پیمانے کا نقشہ بنانے کے لیے استعمال کیا گیا ہے تاکہ امدادی کوششوں میں مدد مل سکے۔

اس میں کہا گیا ہے کہ جون کے وسط سے مون سون کی شدید بارش معمول سے 10 گنا زیادہ ہوئی ہے جس کی وجہ سے ملک کا ایک تہائی سے زیادہ حصہ اب پانی میں ڈوبا ہوا ہے۔

ایجنسی نے سیٹلائٹ کی تصاویر جاری کی ہیں۔ ان میں ایک ایسا علاقہ دکھایا گیا ہے جہاں دریائے سندھ بَہ گیا ہے اور ڈیرہ مراد جمالی اور لاڑکانہ کے شہروں کے درمیان ایک لمبی اوردسیوں کلومیٹر چوڑی جھیل بن گئی ہے۔

پاکستانی حکام کا کہنا ہے کہ سیلاب سے تین کروڑ تیس لاکھ سے زیادہ افراد متاثر ہوئے ہیں۔گویا ہر سات میں سے ایک پاکستانی اس وقت سیلاب سے متاثرہ ہے اور تعمیر نو کے کاموں پر10 ارب ڈالر سے زیادہ لاگت آئے گی۔

انتونیو گوٹیرس نے سیلاب کو’’موسمیاتی تبدیلی کی تباہی‘‘قرار دیا ہے اور عالمی برادری سے پاکستان میں ہنگامی امدادی سرگرمیوں کے لیے 16 کروڑڈالر کی اپیل کی ہے۔

اگرچہ سیلاب میں گلوبل وارمنگ کے کردارکا اندازہ لگانا ابھی قبل از وقت ہے لیکن سائنس دانوں کا کہنا ہے کہ بارشیں وسیع پیمانے پر ان توقعات سے مطابقت رکھتی ہیں کہ موسمیاتی تبدیلیاں ہندوستانی مون سون کوزیادہ شدید کردیں گی۔

موسمیاتی نمونوں پر مبنی ایک حالیہ تحقیق میں پیشین گوئی کی گئی ہے کہ اکیسویں صدی کے دوران میں برصغیرپاک وہند میں غیرمعمولی طور پرگیلے مون سون کا امکان چھے گنا زیادہ ہو جائے گا،خواہ بنی نوع انسان کاربن کے اخراج کو کم کر دے، پھر بھی اتنی زیادہ بارشیں ہوں گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں