تحفظ فطرت کے عالمی اتحاد کا العلا میں اہم اجلاس

قدرتی وسائل کے تحفظ اور العلا میں ماحولیاتی توازن کی بحالی اجلاس کے ایجنڈے میں شامل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

عالمی یونین برائے تحفظ فطرت (IUCN) کے علاقائی ڈائریکٹرز کا اجلاس سعودی کے شہر "العلا" کے شاہی کمیشن کی میزبانی میں شروع ہوا، جو 8 ستمبر تک جاری رہے گا۔ اجلاس میں قدرتی ماحول کے تحفظ کی خاطر کام کرنے والی بین الاقوامی قیادت کے نمائندوں نے شرکت کی۔

شاہی کمیشن برائے العلا گورنیٹ کی میزبانی نے قدرتی ماحول کے تحفظ اور جنگلی حیات کے تحفظ اور بحالی کے ذریعہ ایک پلیٹ فارم بھی تشکیل دیا ہے۔ یہ پلیٹ فارم قدرتی ماحول کے تحفظ کی کوششوں کو بڑھانے کے عزم کا اظہار ہے۔

حیاتیاتی تنوع

اجلاس میں قدرتی ماحول کے تحفظ کی خاطر کام کرنے والے بین الاقوامی اتحاد کے علاقائی ڈائریکٹرز، یونین کے ڈائریکٹر جنرل برونو اوبرلے کی موجودگی میں حیاتیاتی تنوع کے تحفظ، قدرتی رہائش گاہوں کی بحالی اور یونین کے رکن ممالک کے درمیان تعاون کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا جا رہا ہے۔ تجربات اور مہارتوں کے تبادلہ اور اہداف کے حصول کیلئے باہمی مدد کے طریقوں پر بحث ہو رہی۔

اجلاس کے شرکاء۔
اجلاس کے شرکاء۔

شاہی کمیشن کے سی ای او عمرو بن صالح المدنی نے کہا العلا میں اس اجلاس کا انعقاد شاہی کمیشن کی جانب سے کی گئی ان کوششوں کی تصدیق ہے کہ شاہی کمیشن کے اقدامات عالمی یونین کے مقاصد سے بھی ہم آہنگ ہیں۔ اس اجلاس میں عربی چیتے کو بچانے کے طریقوں، قدرتی ماحول اور قدرتی رہائش گاہوں کے حفاظت سمیت دیگر اہداف پر مبنی وژن پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

عالمی یونین برائے تحفظ فطرت کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر برونو اوبرلے نے کہا میں ’’ العلا‘‘ میں ہونے والے اس اجلاس میں شرکت پر بہت خوش ہوں۔ اس سلسلے میں جاری کردہ پریس ریلیز میں بتایا گیا کہ اجلاس میں حکومتوں سے بھی مطالبہ کیا گیا کہ وہ اپنی ترجیحات میں ماحول کے تحفظ کو شامل کریں۔

واضح رہے ’’تحفظ فطرت کی عالمی یونین‘‘ کا قیام 1948میں عمل میں آیا اور سعودی عرب 1981 میں اس یونین کا حصہ بنا تھا۔ حالیہ برسوں میں یونین نے جزیرہ نما عرب کے متعلق جو اقدامات کئے ان میں خطرات کی زد میں آنے والی جنگلی حیات کی ریڈ لسٹ بنانا اور علاقے کے مقامی منصوبوں اور ضوابط میں گرین لسٹ کا اندراج کرانا شامل ہے۔

العلا کے رائل کمیشن نے فروری 2021 میں یونین کی باضابطہ رکنیت حاصل کی تھی۔ العلا کے شاہی کمیشن نے ’’عالمی یونین برائے تحفظ فطرت‘‘ کے ساتھ تعاون کے ایک معاہدہ بھی کیا۔ معاہدہ پر شاہی کمیشن کے گورنر شہزادہ بدر بن عبد اللہ بن فرحان آل سعود اور یونین کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر برونو اوبرلے نے دستخط کئے۔

قدرتی وسائل کا تحفظ

یہ معاہدہ العلا میں قدرتی وسائل کے تحفظ اور گورنری میں ماحولیاتی توازن کو بحال کرنے کےعزم کا اعادہ ہے۔ معاہدہ سے قدرتی آثار قدیمہ اور ثقافتی مقامات کے تحفظ سے متعلق ’’العلا‘‘ کی درجہ بندی بہتر ہو گی۔

خیال رہے "سر سبز سعودی عرب اقدام" میں العلا کے 80 فیصد علاقہ کو شامل کیا گیا ہے۔ العلا کی 65 ہزار ہیکٹر بنجر اراضی کی بحالی اور یہاں 30 لاکھ درخت لگائے جائیں گے۔ ان لاکھوں درختوں میں 200 سے زائد مقامی اقسام کے درخت شامل ہوں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں