.

سعودی عرب میں کرونا بچاؤ کیلئے سرگرم ہزاروں کارکنوں کو ہدیہ سپاس

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودیہ عرب کے شہر الخرج میں رات کو منعقد ایک تقریب کا مقصد ان افراد کا شکریہ ادا کرنا تھا جنہوں نے عالمی وبا کرونا میں اپنی جان خطرے میں ڈال کر کام کیا تھا اور وائرس سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر پر عمل کرانے کی سرگرمیوں میں حصہ لیا تھا۔

اس تقریب میں الخرج کے گورنر مساعد ماضی نے کرونا روک تھام کے اس مشن میں شریک تمام معاونین، نجی اور سول ایجنسیوں کے افراد اور رضا کار اداروں کا تہ دل سے شکریہ ادا کیا۔

سرکاری اور غیر منافع بخش اداروں کی جانب سے کرونا سے بچاؤ کی سرگرمیوں میں حصہ لینے والوں کی تعداد 6 ہزار 156 تھی۔ ان میں 193 ادارے بھی شامل تھے۔ جنہوں نے 616 مختلف اقدامات میں حصہ لیا تھا۔ ان 3 ہزار 307 مرد وخواتین رضا کاروں نے مجموعی طور پر2 لاکھ ایک ہزار اور 662 گھنٹے کام کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے مساعد ماضی نے کرونا وبا کے خلاف بر وقت اقدامات اٹھانے پر خادم حرمین شریفین شاہ سلمان اور ان کے ولی عہد محمد بن سلمان کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے کہا وبائی مرض سے نمٹنے کیلئے ان کی پوری دلچسپی اور ہدایات نے اہم کردار ادا کیا، ان کی ہدایت پر وبا کے آغاز میں حرمین شریفین کی مساجد میں ایکشن پلان پر عمل شروع کر دیا گیا۔

خادم حرمین شریفین نے ہدایت دی کہ انسانی صحت سب سے اول ہے اور پھر اس ہدف کو حاصل کرنے کیلئے مملکت کے ہر شعبہ کے افراد نے کام شروع کر دیا۔ اس طرح شریعت کا ایک باوقار اور انسانیت پر مبنی پیغام ساری دنیا میں گیا اور یہ دنیا کے دیگر ممالک کیلئے ایک ماڈل بن گیا۔

حکومت کے تمام اداروں نے ہم آہنگ اور مؤثر کوشش کی اور یہ خیال کیا کہ حکومت کے حلقہ کا وبا کو روکنے میں ایک کردار ہونا چاہیے۔

مقبول خبریں اہم خبریں