اللہ نے سعودی قوم کو الہامی قائد عطا کیا، شاہ سلمان قوم کے حقیقی خادم ہیں: امام کعبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مسجد حرام کے امام کے الشیخ ڈاکٹر عبداللہ بن عواد الجہنی نے مسلمانوں پر زور دیا ہے کہ وہ چھپ کر اور ظاہرا خدا سے ڈریں۔

مسجد حرام میں جمعہ کے خطبہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ "ہر کسی نے خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی 1444ھ کے شوریٰ کونسل کے آٹھوین سیشن کے تیرے اجلاس سے خطاب میں عوام کو نصیحت اور قوم کی رہ نمئی کا فریضہ انجام دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ خادم حرمین شریفین شاہ سلمان کے خطاب میں سعودی عوام اور مسلم امہ کے لیے جامع رہ نمائی کا پیغام موجود ہے۔ ان کے خطاب سے عیاں ہوتا ہے کہ سعودی قیادت کو قوم کا کتنا احساس اور اس کے مسائل ک ادراک ہے۔ سعودی قیادت کے قول وفعل میں کوئی تضاد نہیں بلکہ وہ قرآن وسنت کی روشنی میں قوم کی رہ نمائی اور ان کے حقوق کے حوالے سے اپنی ذمہ داریوں کو کما حقہ ادا کررہی ہے۔

سعودی قیادت نے معاصر تاریخ میں ملک وقوم کی فلاح وبہبود اور اس کی ترقی کے لیے قابل ذکر کارہائے نمایاں انجام دیے ہیں۔ قیادت نے عصر حاضر میں ایک ایسی جدید ریاست کی بنیاد رکھی اور سے مضبوط کیا جس میں قرآن وسنت کو ریاست کے بنیادی قانون کا درجہ حاصل ہے۔

الشیخ الجھنی کا کہنا تھا کہ اللہ تعالیٰ نے اس ملک کو ایک الہامی رہنما سے نوازا۔ شاہ عبدالعزیز آل سعود اور ان کے بعد ان کے صالح بیٹوں کے ہاتھوں یہ مملکت مضبوط اور مستحکم ہوئی اور قوم کی صفوں کو متحد کیا۔

درایں اثنا مسجد نبوی کے خطیب احمد بن طالب حمید نے جمعہ کے اجتماع سے خطاب میں اللہ سے تقویٰ اختیار کرنے پر زور دیا۔

انہوں نے ذکر کیا کہ اللہ تعالیٰ کی صفات میں سے ایک صفت فخر اور عظمت ہے۔ وہ اس کی ربوبیت، فیاضی، فضل، عفو و درگزر اور اس کی رحمت کے سامان کے قلعے ہیں اور اس نے اپنے ظلم و جبر اور محکومی کو اپنے غلبہ اور فیصلے کا مظہر بنایا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اللہ کی بادشاہی، حاکمیت اور فیصلہ خدا کے خوبصورت ناموں کا حوالہ ہے۔ اللہ تعالیٰ نے اپنی آخری کتاب قرآن نازل فرمائی۔ اس میں اللہ تعالیٰ نے انتہائی خوبصورت انداز میں بندوں کے لیے اپنی ربوبیت کا اعلان کیا۔ اپنے رحمان اور رحیم ہونے کی صفت بیان کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں