مدینہ میں سیرت النبی ﷺ اور تاریخ اسلام سے جڑے مقامات کی بحالی جاری

گورنر مدینہ نے مزید 100 مقامات کی بحالی اور تعمیر نو کی بنیاد رکھ دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی حکومت نے مدینہ میں سیرت البنی ﷺ اور سے جڑے 100 مقامات کی بحالی کا منصوبہ شروع کر دیا ہے۔

مدینہ کےگورنر شہزادہ فیصل بن سلمان بن عبدالعزیز اور وزیر حج و عمرہ ڈاکٹر توفیق بن فوزان الربیعہ اور نائب وزیر ثقافت حامد بن محمد فائز نے تعمیر نو اور بحالی کے منصوبوں کے افتتاح کی تقریب میں خصوصی شرکت کی۔

مدینہ کے علاقے میں شروع کئے جانے والے یہ منصوبے سال 2025ء تک مکمل کئے جائیں گے۔

اس کے علاوہ گورنر مدینہ نے آٹھ مکمل منصوبوں کا بھی افتتاح کیا جن میں الغمامہ مسجد، السقیا مسجد، مسجد الرایہ، مسجد ابو بکر صدیق اور عمر ابن الخطاب ، مسجد بنی انیف اور غرس کنواں، جو کہ نبی ﷺ کی حیات کا اہم کنواں ہے، اور عروہ ابن الزبیر محل شامل ہے۔

تقریب کے دوران گورنر مدینہ نے علاقے کی ترقی، اور بحالی و تعمیر نو کے لئے سرکاری، ترقیاتی اور نجی اداروں کے ساتھ معاہدوں اور یادداشتوں پر دستخط کئے ۔

ان معاہدوں میں سید الشھداء سکوائر کی بحالی، سقیفہ بنی ساعدہ، خندق کا مقام، مسجد قبلتین کی بحالی، وادی العقیق کے نچلے حصے میں واقع عثمان بن عفان کے کنویں اور الفقیر کے کنویں کی بحالی شامل ہے۔

شہزادہ فیصل بن سلمان نے حکومتی اداروں کی جانب سے تاریخی مقامات کی بحالی اور منصوبوں کی تکمیل کے لئے تعاون اور ماہرانہ قابلیت کی ستائش کر تے ہوئے وزارت ثقافت اور وزارت حج وعمرہ کے 'ضیوف الرحمٰن پروگرام' کا شکریہ ادا کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں