متحدہ عرب امارات اور دنیا کے دیگرعلاقوں میں آج سہ پہرجزوی سورج گرہن ہوگا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

متحدہ عرب امارات اور دنیا کے دیگر حصوں میں آج منگل کوجزوی سورج گرہن نظرآئے گا۔

متحدہ عرب امارات میں سورج گرہن آج دوپہر 2 بج کر 42 منٹ پر شروع ہوگا اور شام 4 بج کر 54 منٹ پر ختم ہوگا۔سورج گرہن سہ پہر 3:52 بجے اپنی زیادہ سے زیادہ حد تک پہنچ جائے گا ، جب سورج کی سطح کاقریباً 35 فی صد چاند کے پیچھے چھپ جائے گا۔

سورج گرہن یورپ، مغربی سائبیریا، وسط ایشیا، مغربی ایشیا، جنوبی ایشیا اور افریقا کے شمال مشرق میں نظر آئے گا لیکن شمالی امریکا میں نظرنہیں آئے گا۔

روس میں اس کے نقطۂ عروج کے وقت سورج کا 82 فی صد چاند کے پیچھے چھپ جائے گا اور یہ مغربی یورپ میں قریباً 15 سے 30 فی صد گرہن زدہ نظر آئے گا۔

گرہن کی دو اہم اقسام زمین سے دیکھی جاسکتی ہیں: قمری اور شمسی۔ چاند گرہن میں زمین سورج اور چاند کے درمیان ہوتی ہے جبکہ سورج گرہن میں چاند سورج اور زمین کے درمیان ہوتا ہے۔

یورپی خلائی ایجنسی کا کہنا ہے کہ سورج گرہن آسمانی تغیرات کا مظہر ہے۔یہ ہر 16 ماہ کے بعد رونما ہو سکتا ہے اور زمین، سورج اور چاند کی جیومیٹری کے لحاظ سے ساڑھے سات منٹ تک جاری رہ سکتا ہے۔ سورج گرہن اس وقت ہوتا ہے جب سورج، چاند اور زمین تینوں جزوی یا مکمل سیدھ میں ہوتے ہیں۔

یورپی خلائی ایجنسی کا کہنا ہے کہ چاند سورج سے آنے والی روشنی کو روک دیتا ہے اور اس کے بعد زمین پر سایہ ڈالتا ہے، گرہن اس سائے میں موجود ہر شخص کو نظر آتا ہے۔

سورج گرہن صرف شمسی فلٹرز کے ذریعے محفوظ طریقے سے مشاہدہ کیا جا سکتا ہے۔فلکیات کے شوقین عام طور پر آسمانی مظہرکو دیکھنے کے لیے مخصوص چشمے کا انتخاب کرتے ہیں۔کھلی جگہوں سے سورج گرہن کا مشاہدہ کرنے کرنے والوں کومشورہ دیا جاتا ہے کہ وہ اندھے پن کے خطرے سے بچنے کے لیے سورج گرہن کے مخصوص چشمے پہنیں۔

گرہن کے دوران میں سورج کو براہ راست دیکھنا صرف ایک بار محفوظ ہوتا ہے اور وہ مکمل سورج گرہن کے وقت ہوتا ہے کیونکہ،اس طرح کے واقعے کے وقت ایک سے سات منٹ کے درمیان ایک مختصرمدت ہوتی ہے جہاں چاند سورج کو مکمل طور پرروک دیتا ہے۔اس رجحان کو’’کامل‘‘ کہاجاتا ہے۔

یو اے ای کے ایسے مکین جو گھر سے باہرنہیں جانا چاہتے اور سورج گرہن کا براہِ راست مشاہدہ نہیں کرنا چاہتے ہیں وہ اب بھی یوٹیوب ، فیس بک اور ٹویٹر پر بین الاقوامی فلکیاتی مرکز کی براہ راست نشریات کے ذریعے گھر میں بیٹھ کرایسا کرسکتے ہیں۔

متحدہ عرب امارات کا فلکیاتی مرکز بھی اپنے یوٹیوب چینل پر گرہن کو براہ راست نشر کرے گا۔آج ہونے والا سورج گرہن اس سال کا آخری سورج گرہن ہوگا۔آیندہ سورج گرہن اپریل 2023ء میں ہائبرڈ سورج گرہن کے دوران میں ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں