سعودی فلم انڈسٹری میں ترقی کرنے کے شاندار مواقع موجود ہیں: ماہرین

میڈیا کے پیشہ ور افراد، فلمی مواد بنانے والوں اور ناقدین کے لیے تربیتی پروگرام اور خصوصی ورکشاپس کی ضرورت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
6 منٹس read

سعودی عرب میں ماہرین نے سعودی فلمی صنعت کے لیے دستیاب مواقع کی نشاندہی کی اور انڈسٹری کی بہتری کے لئے تجاویز اور مشکلات پر قابو پانے کیلے حل پیش کئے ہیں۔ فلمی ماہرین کا کہنا ہے سعودی عرب میں سینما کی تحریک کی مدد کرنے کے تناظر میں سینما انڈسٹری ترقی پا رہی۔ ماہرین کے مطابق فلم انڈسٹری کے مستقبل کو بہتر بنایا جا سکتا ہے۔

ماہرین نے یہ نتائج 20 ستمبر سے 26 اکتوبر کے دوران سعودی فلم اتھارٹی کی طرف سے "سولی ووڈ" فلم سائٹ کے اشتراک سے منعقد ہونے والی چار ورکشاپس کے دوران اخذ کئے ہیں۔ ان ورکشاپس میں سعودی فلم انڈسٹری کی حقیقت کا مطالعہ کیا گیا۔ پروڈکشن کے سائز اور معیار کے درمیان فرق کا جائزہ لیا گیا۔ فلم انڈسٹری کی خصوصیات اور اقسام پر بات کی گئی، ترقی کی راہ میں رکاوٹ چیلنجوں سے گزرتے ہوئے انڈسٹری کی نمو سے لے کر فلم، میڈیا اور مارکیٹنگ جیسے متعلقہ شعبوں میں بہتری کی سفارشات پیش کی گئیں۔

سعودی سنیما کے لیے چیلنجز اور مواقع

منگل 20 ستمبر کو منعقد پہلی ورکشاپ میں فلم اور میڈیا کے ماہرین نے مملکت میں سنیما میڈیا کو درپیش چیلنجز اور مواقع پر گفتگو کی۔ مقامی سنیمیٹک میڈیا کی حقیقت کا تذکرہ اور میڈیا کی خصوصیات میں مہارت حاصل کی گئی

شرکاء نے سنیما میڈیا کی شکلوں اور عالمی اور مقامی تجربات میں اس کی فنکارانہ شکلوں، تعلقات عامہ اور صحافتی تقریب کے درمیان فلمی میڈیا کے کردار اور سعودی عرب میں سنیما کے واقعات کی پریس کوریج کی حقیقت کی نگرانی پر بھی بات کی۔

خصوصی ورکشاپ کا ایک گوشہ
خصوصی ورکشاپ کا ایک گوشہ

ماہرین نے فلم مواد کی صنعت کے شعبے میں مواقع تلاش کرنے اور چیلنجوں کا سامنا کرنے کی کوشش کی، فلم میڈیا کے لیے کیریئر کے مواقع کی نشاندہی کی گئی ، فلم کی مارکیٹنگ اور جمالیات ، تجربات کو دستاویزکی شکل دینے، پریس اور ڈیجییٹل سینما کے مواد کے ذریعہ بڑے پیمانے پر مواقع کی تلاش کرنے، فلم کیلئے سپانسرز اور اشتہارات جیسے موضوعات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

ورکشاپ نے بحث کا کچھ حصہ میڈیا اداروں کے لیے مخصوص چیلنجوں کے لیے مختص کیا، ان چیلنجز میں معاشی حالات، فلمی صحافی کی اہلیت، تنقیدی تجزیاتی صلاحیت اور پروڈکشن بجٹ کی کمی، اسی طرح میڈیا مارکیٹنگ میں پیچھے رہ جانے کے چیلنجز پر بات چیت کی گئی۔

ماہرین نے اپنی سفارشات بھی پیش کیں اور کہا فلمی مواد بنانے والوں اور ناقدین کے لیے وقتاً فوقتاً تربیتی پروگرام اور خصوصی ورکشاپس قائم کرنے کی ضرورت ہے۔

ماہرین نے روایتی دائرے سے نکل کر سامعین کے ذوق کو بڑھانے اور ان کے جذبے کو ابھارنے میں کردار ادا کرنے کی ضرورت کا مشورہ بھی دیا۔ مقامی پریس اور میڈیا کی کوششوں کی حمایت کی تاکہ تنقیدی تجزیاتی مواد کو سنیما کے نقطہ نظر سے بڑھایا جا سکےاور مقامی سعودی سنیما تحریک کو اجاگر کیا جا سکے۔

بچوں کا سنیما، مواقع اور چیلنجز

یکم اکتوبر کو منعقد ہونے والی ایک اور ورکشاپ میں شریک ماہرین نے بچوں کے سینما کو درپیش چیلنجز اور ان پر قابو پانے کے طریقوں پر گفتگو کی۔ جس میں سینما کی اہمیت اور بچوں پر اس کے اثرات، چائلڈ سینما کے تصور اور نمایاں خصوصیات کو واضح کیا گیا۔

فلمی مستقبل پر تبادلہ خیال
فلمی مستقبل پر تبادلہ خیال

شرکا نے بچوں کے سنیما کے لیے بہت سے مواقع کی نشاندہی کرنے کی کوشش کی۔ ماہرین نے کہا کہ مقامی اور عرب مقابلے کی عدم موجودگی تخلیقی صلاحیتوں اور عمدگی کے لیے نئے افق کھولتی ہے۔

پچھلے مواقع اور چیلنجوں کی بنیاد پر ماہرین نے بچوں کے سنیما کےحوالے سے خصوصی فیسٹیول منعقد کرنے، ایک ایسا ڈیٹا بیس قائم کرنے کی سفارش کی جو ماہرین اور بچوں کے سینما میں دلچسپی رکھنے والوں کو اکٹھا کرے تاکہ ان کے درمیان رابطے کو آسان بنایا جا سکے ۔

سعودی فلمی شعبے کا کردار

تیسری ورکشاپ جو پیر 17 اکتوبر کو ریاض میں منعقد ہوئی، میں فلم اور بصری میڈیا کے شعبے کے ماہرین کے ایک گروپ نے شرکت کی۔ ورکشاپ میں مقامی معیشت کو سہارا دینے میں سعودی فلمی شعبے کے کردار پر بات کی گئی۔ مملکت میں فلم مارکیٹ کے حجم، مقامی معیشت کو سپورٹ کرنے میں فلم سیکٹر کے کردار اور دستیاب پیشہ ورانہ مواقع کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا۔

مواقع کا جائزہ لینے کے بعد مقررین نے مقامی اور غیر ملکی سرمایہ کاروں کے سامنے سعودی فلمی شعبے کو درپیش سب سے نمایاں چیلنجز اور ان چیلنجز پر قابو پانے کے لئے فلمی شعبے کو لیبر مارکیٹ میں مزید مربوط کرنے کے طریقوں پر روشنی ڈالی۔

ماہرین نے سفارشات پیش کیں ۔ ان سفارشات میں فلموں کے لیے مالی امداد کے نتائج کا مسلسل مطالعہ اور جائزہ لینے کی ضرورت پر زوردیا گیا۔ مقدار سے قطع نظر پیداوار کے معیار اور معیار پر توجہ دینے کا کہا گیا۔ تمام فلمی پیشوں میں مقامی کیڈرز کی خصوصی تربیت کے دائرہ کار کو بڑھانے کی تجویز دی گئی۔

فلم کی مشترکہ پروڈکشن

چوتھی ورکشاپ جو 26 اکتوبر بروز بدھ منعقد ہوئی کے دوران ماہرین نے پروڈکشن کے شعبے کو درپیش چیلنجز پر قابو پانے اور اس شعبہ کو ترقی دینے کے طریقوں پر روشنی ڈالی۔ مشترکہ پیداوار کے لیے دستیاب مواقع پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں