بوڑھے سوئس شہری کے گمشدہ 20000 ڈالر ایماندار میاں بیوی کی وجہ اس کے گھر پہنچ گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سوئٹزر لینڈ اگرچہ ایسے ملکوں میں شامل ہے جہاں کے خوبصورت مناظر بڑے دلکش اور دلفریب مانے جاتے ہیں۔ لیکن یہ ایک منظر جو سوئٹزر لینڈ کی ایک گلی اور بنک کے سامنے دیکھنے کو ملا ہے وہ آج کی دنیا میں کم کم ہی دیکھنے کو ملتا ہے۔ جب کبھی ایسی خبریں سامنے آتی ہیں تو گویا دلوں کو چھو لیتی ہیں۔

یہ سوئٹزرلینڈ میں ایک ایسے بوڑھے شخص کے بیس ہزار ڈالر گم ہونے کا منظر ہے۔ جس نے بنک سے رقم نکلوائی ، بیس ہزار ڈالر ایک لفافے میں محفوظ کیے اور گاڑی میں سوار ہو کر گھر کو چل دیا۔ جب گھر پہنچا تو معلوم ہوا کہ اس کے پاس بنک سے نکلوائے گئے بیس ہزار ڈالر موجود نہیں ہے۔

اسے تشویش ہوئی کہ کسی نے اس کی جیب کاٹ لی ہے ۔ یا اس کے ساتھ کوئی اور واردات ہوگئی ہے۔ یہ بوڑھا شخص اپنی اس تشویش میں مبتلا ہو کر پریشان ہو گیا ۔ بوڑھے شخص کا ایک اور مسئلہ یہ تھا کہ وہ گونگا ہے، گویا اپنی فریاد کرنے اور بپتا سنانے میں اور مسئلہ ہر کسی کو سمجھا پانے سے بھی قاصرتھا۔

وہ پولیس کے پاس چلا گیا ، پورے اس اعتماد کے ساتھ کہ پولیس اس کی گم شدہ رقم واپس دلوا سکے گی۔ پولیس نے اس کی درخواست کا جائزہ لیا مارٹگنی کے اس چھوٹے قصبے کے متعلقہ بنک سے رجوع کیا کہ ایک بوڑھا سائل آیا ہے۔ کیا اس نے اسی بنک سے رقم نکلوائی تھی۔؟

تاہم کچھ ہی دیرمیں ایک جوڑا اس بوڑھے آدمی کی رقم لے کر اس کے گھر پہنچ گیا، اس میاں بیوی کو یہ رقم اسی جگہ سے ملی تھی جہاں سے یہ بوڑھا آدمی گاڑی پر سوار ہو مگر رقم نیچے گر گئی۔ لفافے پر اس کا گھر کا پتہ اور نام وغیرہ درج تھا ، اس لیے میاں بیوی نے ایمانداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے یہ رقم اس بوڑھے کے گھر پہنچا دی۔

مارٹگنی کی اس رہائشی اس بوڑھے کو اس کی رقم واپس ملی تو ہ خوشی سے نہال ہو گیا ۔ اس نے پانچ سو فرانک کی رقم اس ایماندار جوڑے کو انعام کے طور پر دے دی۔ ایسے مناظر مسلم دنیا میں بھی بعض اوقات دیکھنے کو مل جاتے ہیں لیکن اب ان واقعات کی بہتات نہیں رہی ۔ سوئس پولیس نے بھی اس واقعے پر خوشی کااظہار کیا کہ ایک بوڑھے آدمی پونجی اسے گھر بیٹھے مل گئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں