سعودی ہیریٹیج اتھارٹی نے 67 نئے مقامات کو آثار قدیمہ میں شامل کر لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی ہیریٹیج اتھارٹی نے 67 نئے آثار قدیمہ کا نوادرات کے قومی رجسٹر میں اندارج کر لیا ہے۔ ان نئے مقامات میں متعدد آثار قدیمہ اور تاریخی مقامات شامل ہیں۔ اس طرح سعودی عرب میں اب تک رجسٹرڈ آثار قدیمہ کے مقامات کی کل تعداد 8 ہزار 531 تک پہنچ گئی ہے۔

شمالی سرحدی علاقے سے سب سے زیادہ 15 مقامات کو آثار قدیمہ کا درجہ دیا گیا۔ تبوک سے 13مقامات، حائل 10، الجوف 9، القصیم 5، ریاض سے 4 مقامات، عسیر 3، مدینہ منورہ سے 3 مقامات، الباحہ سے ایک اور مکہ مکرمہ سے بھی ایک مقام کو آثار قدیمہ میں جگہ دی گئی۔

ہیریٹیج اتھارٹی مملکت میں آثار قدیمہ اور تاریخی مقامات کی دریافت کے لیے کام کرتی ہے۔ آثار قدیمہ کہلائے جانے کے قابل مقامات کو رجسٹرڈ کیا جاتا ہے، ان کے ڈیجیٹل نقشے بنائے جاتے ہیں ، ان کے تحفظ کے اقدامات اتھائے جاتے، تحفظ میں آسانی پیدا کرنے کیلئے ان کا مقامی ڈیٹا بنایا جاتا ہے۔ ان پر کئے جانے والے کاموں کو محفوظ کیا جاتا اور دستاویزی شکل دی جاتی ہے۔ ان کی تصاویر لی جاتی اور انہیں فلمایا جاتا ہے۔

ہیریٹیج اتھارٹی نے شہریوں سے مطالبہ کیا کہ وہ "بلاغ" پلیٹ فارم کے ذریعے دریافت ہونے والے کسی بھی آثار قدیمہ کی اطلاع دیں۔ اتھارٹی نے گزشتہ کچھ عرصہ کے دوران اس حوالے سے شہریوں کی کوششوں کی تعریف بھی کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں