باران رحمت کے دوران فرزندان توحید نے طواف کعبہ کی سعادت حاصل کی

شدید بارش کی وجہ سے جدہ سے مکہ کو ملانے والی مرکزی ہائی وے بند

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مکہ معظمہ میں ہونے والی باران رحمت بیت اللہ اور اس کے اطراف میں بھی خوب برسی۔ باران رحمت کے دوران عمرہ زائرین نے طواف کعبہ جاری رکھا۔

حرم مکی میں بارش میں معتمرین کو طواف کےدوران اللہ سے اپنی التجائیں مانگتے دیکھا جا سکتا ہے جو بارش کے دوران اللہ کریم سے اپنے اور اپنے پیاروں کے لیے رحمت کی دعائیں مانگ رہے ہیں۔

صدارت عامہ برائے امور حرمین شریفین نے بارش کے لیے اپنی تیاریوں میں اضافہ کر دیا ہے۔ بارش کی صورتحال اور پانی کے اخراج سے نمٹنے کے لیے 200 سے زیادہ سپروائزرز اور نگران، 4000 مرد اور خواتین کارکنان اور 500 سے زیادہ آلات تیار کیے ہیں۔

بارش کے بعد صحن مطاف ، مسجد کے داخلی اور خارجی راستوں کو خشک رکھنے کے لیے ہرممکن اقدامات کیے گئے ہیں تاکہ اللہ کے مہمان آسانی اور سہولت کے ساتھ مناسک اور عبادات ادا کر سکیں۔

مکہ جدہ ہائی وے بارش کی وجہ سے بند

ادھر امارہ مکہ مکرمہ ریجن نے احتیاطی تدابیر کے تحت مکہ ۔ جدہ ہائی وے کو بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔ شدید بارشوں کی وجہ سے جدہ کی متعدد سڑکیں بند ہو گئی ہیں جن میں الحرمین روڈ بھی شامل ہے۔

دوسری جانب جدہ کے شاہ عبدالعزیز ہوائی اڈے نے اعلان کیا ہے کہ موسم کی خرابی کی وجہ سے کچھ پروازوں کے ٹیک آف میں تاخیر ہوئی۔مسافروں سے کہا گیا ہے کہ وہ موسم کے حالات کے پیش نظر پروازوں کے شیڈول میں تبدیلی کے حوالے سے دی جانے والی ہدایات پر عمل درآمد کریں اور پروازوں کی تاخیر کے امکانات کو سامنے رکھیں۔

ادھر صدارت عامہ برائے امورحرمین شریفین نے بارشوں کے موسم کے تناظرمیں مسجد حرام اور مسجد نبوی میں نمازیوں اور زائرین کی سہولیات کے لیے ہنگامی انتظامات کیے ہیں۔انتظامیہ نے بارشوں کی وجہ سے الرٹ کا درجہ بڑھا دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں