بارش سے سعودی علاقہ ’’مرکز ناوان" فطرتی حسن کی مجسم تصویر بن گیا

جنوبی سعودی عرب کے علاقہ میں ہریالی نے لوگوں کی توجہ مبذول کر لی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جنوبی سعودی عرب میں المخواۃ گورنری میں الباحہ علاقے کے قریب واقع ’’مرکز ناوان " نے اس جگہ کی خوبصورتی اور بے پناہ ہریالی کی توجہ اپنی جانب مبذول کرائی جس نے اس مقام کو ایک جمالیاتی پینٹنگ میں تبدیل کر دیا۔ یہ وہ فن پارہ ہے جو فطرت پر بارش کے اثرات کو ظاہر کرتی ہے۔

 تصویر ۔ علی الشداوی
تصویر ۔ علی الشداوی

بارش سے باخبر رہنے والے فوٹوگرافر علی الشداوی نے تصدیق کی کہ الباحہ شہر کے مغرب میں واقع ’’مرکز ناوان"میں ہریالی کے وسیع پھیلاؤ حیرت زدہ کر دینے والا ہے۔ یہ دیکھنے والوں کے لئے الوہیت کا سامان لئے ہوئے ہے۔ اسے دیکھ کر اللہ کی قدرت پر ایمان مضبوط ہو جاتا ہے۔ اس میں دلکش قدرتی جمال موجود ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مرکز ناوان رقبے کے لحاظ سے الباحہ علاقے کا سب سے بڑا مرکز ہے اور یہ اپنی بڑی وادی کے لیے مشہور ہے جو بہت سی ذیلی وادیوں کو پالتی ہے۔ اسی طرح لیموں بھی ہے۔

 مركز ناوان - تصوير علي الشدوي
مركز ناوان - تصوير علي الشدوي

سماجی کارکن عبدالرحمٰن الزہرانی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کے ساتھ اپنے انٹرویو میں واضح کیا کہ مرکز ناواں کی آبادی کا تخمینہ 12000 سے زیادہ ہے۔ اس کے دیہات کی تعداد 53 ہے۔ یہاں رہنے والے ایک روشن مہذب مستقبل کی راہ پر گامزن ہیں۔ مرکز ناوان کو مستقبل میں ایک ماڈل شہر بنائے جانے کا منصوبہ ہے۔ ناوان میں 6 ملین مربع میٹر پر ایک صنعتی شہر بھی آباد ہے۔

مركز ناوان - تصوير علي الشدوي
مركز ناوان - تصوير علي الشدوي
مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں