بھارتی پاسپورٹ کاحامل بنگلہ دیشی ہوائی اڈے پرقومی ترانہ گانے میں ناکامی پرگرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

بنگلہ دیش کے ایک شہری کوامیگریشن کی درخواست پربھارت کا قومی ترانہ گانے میں ناکام رہنے پر گرفتار کرلیا گیا ہے۔اس نے مبیّنہ طور پر جعلی دستاویزات کا استعمال کرتے ہوئے بھارتی پاسپورٹ حاصل کیا تھا۔

انورحسین متحدہ عرب امارات کے شہرشارجہ سے ایئر عربیہ کی پرواز کے ذریعے بھارت کے جنوبی شہر کوئمبٹور پہنچاتھا۔

اس نے جب حکام کو اپنا پاسپورٹ پیش کیا تواس سے یہ انکشاف ہوا کہ اس پربھارت کے ایک اور شہر کولکتہ میں رہائش کا پتالکھا تھا۔اس پرحکام نے انورحسین سے پوچھ تاچھ شروع کردی ہے۔

ٹائمز آف انڈیا نے ایک پولیس افسر کے حوالے سے بتایاکہ ’’ بنگلہ دیشی شہری نے سوالوں کے متضاد جوابات دیے۔اس نے پیدائش کا سرٹی فکیٹ بھی پیش کیا، جومبیّنہ طور پر جعلی ہے اوربھارت کا قومی شناختی کارڈ پیش کیاجسے ’آدھار کارڈ‘کہا جاتا ہے۔

اس موقع پر،جب حکام نے اس سے بھارت کا قومی ترانہ گانے کے لیے کہا، تو حسین نے اعتراف کیا کہ وہ دراصل بنگلہ دیش کے ضلع میمن سنگھ میں واقع گاؤں پیاری سے تعلق رکھتا ہے اور بنگلہ دیشی شہری ہے۔اسے پیر کے روز گرفتار کیا گیا تھا۔

ابتدائی جانچ سے پتاچلاہے کہ 28 سالہ نوجوان نے 2018 میں تریپور میں کام کیا تھا اور اس وقت جعل سازی کے ذریعے آدھارکارڈ اور پیدائش کا جعلی سرٹی فکیٹ حاصل کیا تھا۔

اس نے سنہ 2020ء میں ان دستاویزات کا استعمال کرتے ہوئے مبیّنہ طور پربھارت کا کارآمد پاسپورٹ حاصل کیا اور متحدہ عرب امارات کا سفرکیا تھا۔حکام نے انورحسین پر غیرملکی ایکٹ کے تحت فردِجُرم عایدکی ہے اور فی الحال اسے عدالتی تحویل میں رکھا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں