ذیابیطس اور خون میں کمی کے مریضوں کے لیے کتنی کھجور کھانا فائدہ مند ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کھجوریں میٹھی اور ورسٹائل ہوتی ہیں اور ان کے صحت کے بہت سے فوائد ہوتے ہیں۔ ’’ہیلدی فائی می‘‘ کے مطابق کھجور میں آئرن کی زیادہ مقدار خون کی کمی کے شکار لوگوں میں ہیموگلوبن کی سطح کو بڑھانے میں مدد کرتی ہے۔

وٹامن اور معدنیات

کھجور صحت مند حفاظتی اینٹی آکسیڈنٹس، کیلشیم، بی وٹامنز ، میگنیشیم اور وٹامن کے سے بھرپور ہوتی ہے۔ تاہم کھجور میں کاربوہائیڈریٹ کی مقدار زیادہ ہو سکتی ہے۔ 100 گرام کھجور میں تقریباً 75 گرام کاربوہائیڈریٹ ہوتے ہیں۔ کاربوہائیڈریٹس کی یہ زیادہ مقدار ذیابیطس کے مریضوں کے لیے پریشانی کا باعث بن سکتی ہے۔

متنوع ریشوں کا راز

کھجوریں مصنوعی مٹھاس کی طرح کیلوریز کے بغیر نہیں ہوتیں۔ لیکن کھجور میں حل پذیر اور ناقابل حل دونوں فائبر ہوتے ہیں جو خون میں شکر کی سطح کو مستحکم کرنے میں مدد کرتا ہے۔ کھجور میں موجود مختلف ریشے ہاضمے کے عمل اور کاربوہائیڈریٹس کے جذب کی رفتار کو سست کرتے ہیں۔ اس طرح خون میں گلوکوز میں اضافے کو روکتے ہیں۔ اگر کوئی شخص کم بلڈ شوگر کی علامات کا سامنا کر رہا ہے تو کھجور توانائی کے فوری فروغ کے لیے ایک بہترین ناشتہ ہے۔

گلیسیمک انڈیکس

اس بات کا تعین کرنے کے لیے کہ آیا کھجوریں بلڈ شوگر کی سطح کو بڑھاتی ہیں کوئی بھی گلیسیمک انڈیکس سے اندازہ لگا سکتا ہے۔ کھانے کا گلیسیمک انڈیکس (GI) بتاتا ہے کہ کھانے میں موجود شکر کتنی جلدی خون میں جذب ہو جاتی ہے۔ کم ’’جی آئی ‘‘ والے کھانے کی نسبت زیادہ ’’جی آئی ‘‘ والا کھانا خون کے دھارے میں زیادہ تیزی سے جذب ہو جاتا ہے جس کی وجہ سے بلڈ شوگر میں تیزی سے اضافہ ہوتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں