شہزادہ اینڈریو نے ہیری اور میگھن کے گھر پر قبضہ کرلیا

ڈیوک اور ڈچس آف سسیکس کو کتاب ’’سپیئر ‘‘ کی اشاعت کے چند دن بعد جائیداد خالی کرنے کے لیے کہا گیا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطانوی پریس رپورٹس کے مطابق بدھ کو شہزادہ ہیری اور ان کی اہلیہ میگھن کو برطانوی شاہی خاندان کے ونڈسر ہاؤس میں واقع ان کے گھر سے بے دخل کر دیا گیا ہے جس سے وہ برطانیہ میں کسی بھی رہائش سے محروم ہیں۔

فرگمور کاٹیج کی جوڑے نے 2.4 ملین پاؤنڈ ( 2.9 ملین ڈالرز) میں تزئین و آرائش کی تھی ۔ یہ کاٹیج 2018 میں ملکہ الزبتھ II کی طرف سے شادی کا تحفہ تھا۔ اخبار "دی سن" اور "ڈیلی ٹیلی گراف" نے اطلاع دی ہے کہ یہ گھر بادشاہ چارلس سوم کے بھائی شہزادہ اینڈریو کو دیا گیا تھا۔ ہیری اور میگھن، جنہیں ڈیوک اور ڈچس آف سسیکس بھی کہا جاتا ہے، کو گزشتہ جنوری میں شہزادے ہیری کی یادداشتوں ’’سپیئر‘‘ کی کی اشاعت کے چند دن بعد گھر خالی کرنے کا کہا گیا تھا۔

چارلس نے اکثر شاہی خاندان سے وابستہ اخراجات کو کم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ چارلس فی الحال خاندانی مالیات کا جائزہ لے رہے ہیں۔ اینڈریو کے لیے سالانہ 2 لاکھ 50 ہزار پاؤنڈ کی گرانٹ کی منسوخی سے اینڈریو کو 30 کمروں پر مشتمل رائل لاج ونڈسر ہاؤس میں اپنی موجودہ رہائش گاہ چھوڑنا پڑ سکتی ہے۔ اس گھر کی دیکھ بھال کے بہت زیادہ اخراجات ہیں۔ ہیری اور میگھن 2020 میں شاہی خاندان میں اپنی وابستگی ختم کرنے کے بعد کیلیفورنیا چلے گئے تھے۔ اس کے بعد سے جوڑے نے اوپرا ونفری کے ساتھ انٹرویو سے لے کر "نیٹ فلیکس" پر ایک دستاویزی فلم تک کئی منصوبوں میں حصہ لیا جس میں انہوں نے شاہی خاندان کی طرف سے برتی گئی بدسلوکی کی شکایت کی تھی۔

ہیری کی سوانح عمری ’’سپیئر ‘‘ نے گزشتہ جنوری میں اپنی اشاعت کے بعد فروخت کے ریکارڈ توڑ دیے تاہم اس کتاب کے بعد ہیری کی مقبو لیت میں بھی کمی دیکھی گئی۔ اینڈریو کو آنجہانی مالیاتی ماہر جیفری ایپسٹین سے دوستی کی وجہ سے عوامی زندگی چھوڑنے پر مجبور کیا گیا تھا جو جنسی زیادتی کے مقدمات میں سزا یافتہ تھے ۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں