رمضان المبارک کا چاند کب نظر آئے گا؟ عالمی فلکیاتی مرکز کی رائے

عالم عرب اور اکثر اسلامی ملکوں میں یکم رمضان المبارک 23 مارچ کو ہونے کا امکان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ابوظہبی میں قائم بین الاقوامی فلکیاتی مرکز نے رمضان المبارک کے چاند کے حوالے سے امکانات کے حوالے سے رائے پیش کی ہے۔ فلکیاتی مرکز نے بتایا کہ بعض ملکوں میں شعبان کا مہینہ 21 فروری بروز منگل شروع ہوا اور یہ ملک 21 مارچ بروز منگل رمضان المبارک کے چاند کو دیکھنے کی کوشش کریں گے۔ دیگر کئی ملکوں میں شعبان کا مہینہ 22 فروری بروز بدھ کو شروع ہوا تھا۔ ان ملکوں میں انڈونیشیا، ملائیشیا، برونائی اور بھارت، بنگلہ دیش، پاکستان، ایران، عمان، اردن، الجزائر، مراکش اور موریطانیہ شامل ہیں۔ ان ملکوں میں ماہ مقدس کا چاند دیکھنے کی کوشش 22 مارچ بدھ کو کی جائے گی۔

مرکز کے ڈائریکٹر محمد شوکت عودہ نے مرکز کی آفیشل ویب سائٹ پر ایک بیان میں کہا ہے کہ 21 مارچ منگل کو ہلال کی تحقیقات کرنے والے ملکوں میں چاند کا نظر آنا ناممکن ہے۔ کیونکہ 21 مارچ کو چاند سورج کے غروب سے قبل ہی غروب ہو جائے گا۔ اس طرح ان ملکوں میں شعبان کے مہینے کے 30 دن مکمل ہوں گے اور ان ملکوں میں یکم رمضان المبارک 23 مارچ جمعرات کو ہوگا۔

محمد شوکت عودہ نے بات آگے بڑھائی اور کہا وہ ممالک جو 22 مارچ بدھ کو ہلال کی تحقیقات کریں گے۔ اس دن چاند کو دیکھنا دنیا کے مشرق میں ٹیلی سکوپ کے ذریعے ممکن ہے۔ وسطی ایشیا، مشرقی یورپ اور جنوبی افریقہ میں چاند ننگی آنکھ سے دیکھنا مشکل سے ممکن ہے۔ چاند مغربی ایشیا، بیشتر افریقہ، مغربی یورپ اور امریکہ میں نسبتاً آسانی سے ننگی آنکھ سے دیکھنا ممکن ہوگا۔

انہوں نے کہا 22 مارچ کو چاند دیکھنے کی کوشش کرنے والے زیادہ تر ملکوں میں توقع کی جارہی ہے وہ چاند دکھائی دینے کا اعلان کردیں گے اور ان ملکوں میں بھی جمعرات 23 مارچ کو یکم رمضان ہوگا۔ اس حوالے سے یہ بھی مد نظر رہے کہ پاکستان، بھارت اور بنگلہ دیش میں بدھ کے روز چاند نظرنہ آنے کا امکان ہے اور ہوسکتا ہے ان ملکوں میں یکم رمضان المبارک جمعہ 24 مارچ کو ہو۔

رمضان کا چاند دیکھنے کے حوالے سے جاری تصویر
رمضان کا چاند دیکھنے کے حوالے سے جاری تصویر

مرکز نے ایک نقشہ بھی شائع کیا جس میں بتایا گیا ہے کہ دنیا کے تمام خطوں سے 22 مارچ بروز بدھ کو رمضان المبارک کا چاند کس حد تک دیکھا جا سکتا ہے۔ نقشہ کی تفصیل ایسے بنتی ہے۔

۔۔۔ نقشے میں سرخ رنگ والے علاقوں میں چاند دیکھنا ناممکن ہے۔ ان علاقوں میں چاند سورج سے پہلے غروب ہو جائے گا یا غروب آفتاب کے بعد ملاپ کے اوقات میں غروب ہوگا۔

۔۔۔ بے رنگ علاقوں میں چاند کا دیکھنا دوبین اور ننگی آنکھ سے دیکھنا ممکن نہیں۔

۔۔۔ نیلے رنگ والے علاقوں میں ہلال دیکھنا صرف دوربین سے ممکن ہوگا۔

۔۔۔ گلابی رنگ میں واقع علاقوں میں دوربین کے ذریعے ہلال کو دیکھنا ممکن ہے، فضا کی مکمل صفائی اور تجربہ کار مبصر کی نگرانی کی صورت میں ہلال کو کھلی آنکھوں سے دیکھنا بھی ممکن ہوگا۔

۔۔۔ سبز رنگ والے علاقوں میں چاند کو کھلی آنکھ سے دیکھا جا سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں