سعودی عرب میں رمضان المبارک کی آمد پر مساجد کی بھرپور تیاریاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں وزارت اسلامی امور نے تصدیق کی ہے کہ 1444 ہجری کے رمضان المبارک کی آمد پر ملک بھر کے مختلف خطوں میں مساجد نے بھرپور تیاریاں کی ہیں۔

سعودی عرب کی مساجد نے ماہ قرآن کے دوران نمازیوں کے لیے زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کرنے کی کوشش کی ہے۔ مساجد کو ایئرکنڈیشنرز اور آڈیو ڈیوائسز سے لیس کیا گیا ہے۔ بہت سے مساجد نے بیت الخلا کی سہولت کو توسیع دی ہے اور پہلے سے موجود بیت الخلا کو بہتر بنایا ہے۔ تاکہ نمازی بہتر اور تیز تر سہولت حاصل کریں اور یکسو ہو کر اللہ کی عبادت میں مشغول ہوسکیں۔

مساجد نے رمضان المبارک میں بہت سے پروگراموں کا نفاذ کیا ہے۔ خادم حرمین شریفین کے پروگرام کے تحت اسی طرح بہت سے دعوتی اور علمی سرگرمیاں منعقد کی گئی ہیں۔ دنیا کے 60 ممالک میں روزہ داروں کے لیے کھجوریں تقسیم کی گئی ہیں۔ مساجد میں وزارت کے تحت افطار کرانے کا بھی بندوبست کیا گیا ہے۔

وزارت اسلامی امور نے بتایا کہ وزارت کے خصوصی پروگراموں کو سعودی عرب سے باہر نافذ کرنے کے لیے بھرپور تیاریاں کی گئیں۔ غیر ملکیوں کے لیے پروگراموں میں روزہ داروں کو افطار کرانے کا پروگرام بھی شامل ہے ۔ اس پروگرام کے لیے 5 ملین ریال مختص کیے گئے۔ 40 ملکوں میں اس منصوبے پر عمل درآمد ہورہا۔ خادم حرمین شریفین کی جانب سے کھجور کے تحائف بھی بھجوائے گئے۔

اس منصوبے کے لیے منظور شدہ رقم 200 ٹن کجھور کو بڑھا کر 500 ٹن کردیا گیا ۔ یہ کھجور 60 ملکوں میں تقسیم کی جارہی۔ بیرون ملک امامت پروگرام کے لیے سرگرمی انجام دی گئی اور اس سال یہ پروگرام 18 ملکوں تک پہنچ گیا۔ ان 18 ملکوں میں سعودی عرب کی طرف سے 54 اماموں کو روانہ کیا گیا۔ ان ملکوں کی طرف سے اماموں کی فراہمی کی درخواست دی گئی تھی۔

وزارت نے بیرون ملک وزارت سے منسلک مذہبی اتاشی اور مراکز کو مدینہ میں قرآن کریم کی طباعت کے لیے کنگ فہد کمپلیکس کی مختلف اشاعتوں کی دس لاکھ کاپیاں فراہم کیں۔ بیرون ملک وزارت کے مبلغین اور گریجویٹز کی شرکت سے سعودی یونیورسٹیاں دعوت اور تعلیم کے پروگراموں میں دنیا کے 100 سے زیادہ ملکوں میں لوگوں کو ماہ مقدس کے احکام اور فضائل کے بارے میں آگاہی فراہم کر رہی ہیں۔ لوگوں کے فکری تحفظ کے ساتھ اعتدال اور رواداری کے تصور کو عام کرنے کی سعی کی جارہی ہے۔

وزارت نے بتایا کہ اس نے سعودی عرب کے تمام خطوں میں 83 ہزار 439 یونیورسٹیوں اور مساجد کو دیکھ بھال، صفائی اور حفظان صحت کے مواد کی فراہمی یقین بنا کر 6 ہزار 760 پروگراموں، تقریبات اور سرگرمیوں کا آغاز کیا۔

سعودی عرب کی مساجد میں میں اسباق، تقاریر، لیکچرز، سیمینارز، دعوتی دورے اور کورسز شروع کئے گئے جو معاشرے کے مختلف طبقوں کو روزے کے آداب اور احکام کے بارے میں آگاہی فراہم کر رہے۔ روزہ افطار کرانے کے لیے اجازت نامے کے اجرا، نقد عطیات جمع کرانے کے احکامات کے نفاذ اور اسراف و فضول خرچی کے خلاف انتباہ کو یقینی بنایا جارہا ہے۔ فراہم کردہ کھانا لائسنس یافتہ دکانوں سے حاصل کرنا ضروری کیا گیا ہے۔

اعتکاف کے کنٹرول کو منظم کیا گیا ہے۔ 6,440 مرد اور خواتین مبصرین کی ایک ورک ٹیم کو تیار کیا گیا ہے جو مساجد کی نگرانی کر رہی اور ان کی ضروریات پر بات چیت کرتی ہے۔ 2 لاکھ 50 ہزار سے زیادہ معائنے کے دورے کیے جارہے ۔ ماہ مقدس میں مساجد کے ملازمین کے لیے متعلقہ فقہی احکام پر خصوصی کورسز کا انعقاد کیا جارہا۔ اماموں اور مبلغین کے انسٹی ٹیوٹ کے ذریعے ماہ رمضان کے دوران ایک لاکھ 70 ہزار اماموں اور مؤذنوں کی تربیتی دوروں کا انعقاد بھی کیا جارہا۔

وزارت نے اوقات کے اعتبار سے مساجد کو تیار کیا ہے تاکہ ضروری تقاضوں کو پورا کیا جاسکے۔ عازمین کو وصول کرکے خدمات کی تکمیل کو یقینی بنایا گیا ہے۔ مختلف اوقات میں پھیلے ہوئے بیداری بوتھ کے ذریعے متعدد مبلغین اور مترجموں کو کام تفویض کیے گئے ہیں ۔عمرہ کی رسومات سے متعلق علمی اور دعوتی اشاعتیں تقسیم کی جاتی ہیں۔ جنرل سیکرٹریٹ کے آگاہی منصوبے کے تحت معتمرین اور زائرین کے لیے 80 لاکھ سے زیادہ کاموں، سرگرمیوں اور تعلیمی پروگراموں کو نافذ کیا جا رہا ہے۔

رمضان المبارک کے بابرکت مہینے میں وزارت نے سینکڑوں مبلغین اور مترجمین کو 51 ہزار 250 محرک فراہم کرنے کا کام تفویض کیا ہے۔ ان میں خطبات اور علمی اسباق شامل ہیں۔ دوسرے مرحلے میں فیلڈ اسلامی بیداری بوتھ کے ذریعے سائل کو جواب دینے کے منصوبے پر عمل درآمد کیا جارہاہےجہاں توقع ہے کہ اس میں 5 لاکھ سے زیادہ سوالات کے جوابات دیے جائیں گے اور مردوں اور خواتین کے ہالز میں 22 الیکٹرانک سکرینیں لگائی گئی ہیں تاکہ پانچ بین الاقوامی زبانوں میں 68 لاکھ 74 ہزار 560 آگاہی پیغامات فراہم کیے جا سکیں۔ ان زبانوں میں عربی ، انگریزی، اردو، انڈونیشیائی اور فرانسیسی زبان شامل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں