المسجد الحرام میں کھانے کا ضیاع روکنے کے لیے 530 افراد سرگرم

انجمن ’’ اکرام مکہ‘‘ کی ٹیم افطاری کے بعد بچ جانیوالی کھانے کو جمع کرتی اور ضرورت مندوں کو پیش کردیتی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مکہ مکرمہ میں اکرام فوڈ پریزرویشن ایسوسی ایشن نے 530 کارکنوں اور رضاکاروں کو ’’مسجد حرام‘‘ کے صحنوں میں افطاری کے لیے اضافی خوراک محفوظ کرکے فوڈ سیکیورٹی کو بڑھانے کے لیے مختص کردیا ہے۔

انجمن کے ڈائریکٹر احمد حربی المطرفی نے بتایا کہ اس سال انجمن نے 530 ملازمین اور رضاکاروں کو’’ المسجد الحرام‘‘ کے صحنوں میں معیاری منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کے لیے مختص کیا ہے۔ یہ ٹیم اضافی کھانے کی اشیا جمع کرتی، انہیں ترتیب دیتی ہے اور مکہ مکرمہ میں ضرورت مندوں کو پیش کردیتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس منصوبے کا مقصد خوراک کی حفاظت کو بڑھانا، فاضل اشیا کو کم کرنا اور عطیہ دہندگان کی خواہش کو پورا کرنا ہے تاکہ وہ ضرورت مندوں تک پہنچ سکیں۔ احمد حربی المطرفی نے نشاندہی کی کہ اس منصوبے نے گزشتہ سال ماہ صیام میں ’’مسجد بیت اللہ‘‘ کے صحنوں سے 2 لاکھ 13 ہزار کھانے کے ڈبوں کو محفوظ کیا تھا۔

انہوں نے کہا ہم کام کی ٹیم سے تیز کام کرنے کی خواہش رکھتے ہیں۔ اور کوشش کرتے ہیں مسجد حرام کے صحنوں میں لوگوں کی بڑی تعداد کے ساتھ اپنی رفتار برقرار رکھیں۔ ہم اس بات کو یقینی بنانے کی کوشش کرتے ہیں کہ کسی بھی جگہ کھانے کا ضائع نہ کیا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں