ذیابیطس کے مریضوں کے لیے صحت مند سحری کے 7 مفید ٹوٹکے

ذیابیطس کے مریضوں کے لیے مشورے میں سحری کے کھانے میں ممکنہ حد تک تاخیر کرنے اور چائے، کافی اور نمکین مشروبات سے پرہیز کرنے کی ضرورت پر زور دیا گیا ہے۔

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں بہت سے لوگ بالخصوص مریض اپنے آپ کو اس خیال میں مبتلا کرتے ہیں کہ ان کی صحت کو برقرار رکھنے کے لیے سحری میں کیا کھایا جائے۔ اس نقطہ نظر سے مصر کی وزارت صحت اور ہاؤسنگ نے صحت مند سحری کے لیے کچھ تجاویز پیش کی ہیں۔ ذیابیطس کے مریضوں کے لیے یہ تجاویزوبہت مفید ہیں۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ’ٹوئٹر‘ پر مصری وزارت کے اکاؤنٹ پر نشر ہونے والے مشورے میں سحری سے پہلے کے کھانے میں ممکنہ حد تک تاخیر اور اچار اور نمکین کھانے سے پرہیز کا مشورہ شامل ہے۔

ماہرین کا کہنا تھا کہ پھلیاں کھانا اور روٹی کو زیادہ سے زیادہ کم کرنا افضل ہے۔ پنیر، انڈے اور دہی کھانے میں احتیاط برتنے کی ضرورت پر زور دیا گیا ہے اور چائے اور کافی سے پرہیز کرنے کی ضرورت ہے تاکہ ڈائیوریسس میں اضافہ نہ ہو۔

وزارت صحت نے افطار اور سحری کے درمیان وافر مقدار میں پانی پینے کی ضرورت پر زور دیا کیونکہ جسم کو 6 سے 8 بڑے گلاس پانی کی ضرورت ہوتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں