امارات کا چار سالہ سعید المھیری کم عمر ترین مصنف بن گیا

سعید کی 7 سالہ بہن الظبی نے کم عمر ترین پبلشر کے طور پر نام ’’گنیز‘‘میں درج کرایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اماراتی بچے سعید المھیری نے صرف 4 سال کی عمر میں دنیا کا سب سے کم عمر مصنف بننے کا گنیز ورلڈ ریکارڈ قائم کردیا۔ انہوں نے "The Elephant Saeed and the Bear" کے نام سے ایک کتاب لکھ کر یہ اعزاز حاصل کیا۔ اس کے ساتھ ہی اس کی 7 سالہ بہن الظبی المھیری نے سب سے کم عمر پبلشر کے طور پر گنیز ورلڈ ریکارڈ اپنے نام کرلیا۔

سعید المھیری کی بہن الضبی المھیری
سعید المھیری کی بہن الضبی المھیری

تصویروں کی مدد سے یہ کتاب مہربانی کے غصے پر حاوی ہوجانے کی کہانی بیان کرتی ہے۔ اس میں دو جانوروں کے درمیان غیر متوقع دوستی کو بیان کیا گیا ہے۔

سعید اور الظبی کی والدہ نے بتایا کہ سعید نے کہانی کو آسان الفاظ میں لکھا اور ہمیشہ کی طرح گینز کے ثالثوں نے ان کے کام کا بغور جائزہ لیا تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ وہ خود لکھ رہے ہیں۔

کم عمر ترین بک رائٹر بننے والا سعید المھیری
کم عمر ترین بک رائٹر بننے والا سعید المھیری

قابل ذکر ہے کہ لکھاری سعید کی بہن الضبی المھیری نے اپنی پہلی کتاب کی ایک ہزار سے زائد کاپیاں فروخت کرنے کے بعد 7 سال کی عمر میں دنیا کی سب سے کم عمر پبلشر کے طور پر گنیز بک آف ریکارڈ میں اپنا نام روشن کیا۔ ان کی فروخت ہونے والی کتاب کا نام ’’ کانت لدی فکرۃ‘‘ یا ’’میرے پاس ایک آئیڈیا ہے‘‘ تھا۔

امارات کا  ورلڈ ریکارڈ ہولڈر سعید المھیری
امارات کا ورلڈ ریکارڈ ہولڈر سعید المھیری

الظبی المھیری نے بتایا کہ ان کی کتاب ایک لڑکی کے اپنی ماں اور خاندان کے ساتھ تعلقات کے بارے میں ہے۔ کہانی میں فیملی کے دادی کے گھر جانے کے سفر کو بیان کیا گیا ہے۔ الظبی نے کہا کہ وہ مشتری کے اندر سرخ نقطہ دریافت کرنے کے لیے مستقبل میں سائنسدان اور خلاباز بننے کا خواب دیکھ رہی ہیں۔ الظبی نے یہ بھی بتایا کہ 22 صفحات پر مشتمل ان کی کتاب میں ڈرائنگ ان کا اپنا آئیڈیا تھا۔ لیکن میں نے اس ڈرائینگ کو کھینچنے کے لیے ایک ماہر فنکار کی خدمات حاصل کیں۔ الظبی نے کہا مجھے امید ہے کہ بچے میری اس کتاب کو پڑھیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں