اتحاد ایئرویز کے دو اشتہارات پر برطانیہ میں پابندی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اتحاد ایئرویز اب برطانیہ میں اپنے دو حالیہ اشتہارات نہیں چلا سکتی۔ ایک برطانوی ریگولیٹر نے انکشاف کیا ہے کہ اشتہار میں ان کے ماحولیاتی دعوے "مبالغہ آمیزی" پر مبنی ہیں۔

ایڈورٹائزنگ اسٹینڈرڈز اتھارٹی نے بدھ کے روز شائع ہونے والے ایک فیصلے میں کہا کہ گزشتہ سال اکتوبر میں فیس بک پر مشتہر کیے گئے اشتہارات میں کہا گیا کہ ابوظہبی میں قائم اتحاد ایئر لائن "پائیدار ہوا بازی کے لیے زیادہ زوردار اور جرات مندانہ انداز اپنا رہی ہے، تاہم کمپنی دعوے کو ثابت کرنے میں ناکام رہی"۔

اتھارٹی نے کہا کہ" اشتہارات میں اس اثر کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا جو اتحاد کے ساتھ پرواز کرنے سے ماحول پر پڑے گا۔"

اتھارٹی کے مطابق " ہوا بازی کی صنعت میں فی الحال کوئی اقدام یا قابل عمل ٹیکنالوجی نہیں ہے جو 'پائیدار ہوا بازی' جیسے دعوے کو ثابت کرے۔"

اتحاد ایئرویز نے کہا کہ اسے اس فیصلے سے مایوسی ہوئی ہے۔

"پائیداری" اتحاد ایئر لائن کے لیے ایک اہم ترجیح ہے،" کمپنی نے ایک ای میل بیان میں کہا، جس میں ایندھن سے چلنے والے ہوائی جہاز، پائیدار ہوابازی کے ایندھن کی تحقیق کے ساتھ ساتھ کاربن کی افزائش اور مینگرووز کے ذریعے جنگلات کی بحالی میں اپنی سرمایہ کاری پر روشنی ڈالی گئی۔

مارچ میں اسی طرح کے ایک معاملے میں، جرمن ایئر لائن لفتھانزا کے مبالغہ آمیز اشتہار پر پابندی لگا دی گئی تھی۔

آئرش اور آسٹریلوی ایئر لائن دیگر کمپنیوں میں شامل ہیں جن کے اشتہارات پر یورپی ریگولیٹرز نے پابندی لگائی۔

مارچ میں بھی، ماحولیاتی کارکنوں نے آسٹریلوی واچ ڈاگ کو اتحاد کی شکایت کی کہ ہوائی کمپنی نے کھیل کے دوران اشتہارات میں 2050 تک خالص صفر اخراج تک پہنچنے کے عزائم کو فروغ دیا جبکہ ایئر لائن کے پاس خالص صفر اخراج کا کوئی قابل اعتبار راستہ نہیں ہے۔

ہوا بازی عالمی اخراج کے نسبتاً کم تناسب کا سبب بنتی ہے۔ تقریباً 2 فیصد - لیکن اس میں اضافہ متوقع ہے کیونکہ دیگر بہت سے شعبے ڈی کاربنائزیشن کی طرف بڑھ رہے ہیں اور ہوابازی میں مسافروں کی تعداد ہو رہا ہے۔ اسی طرح ڈی کاربنائزیشن کے لیے ہوابازی ایک مشکل شعبہ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں