ریٹائرڈ سعودی ٹیچر نے 8 ماہ میں اپنے ہاتھوں سے لکھا قرآن کریم کا نسخہ تیار کرلیا

استاد خالد الزہرانی کو قرآن لکھنے کا خیال دو سال قبل آیا، روزانہ دو صفحات تحریر کرتے تھے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک ریٹائرڈ سعودی استاد خالد الزہرانی نے بغیر تھکے 8 ماہ کے اندر اپنی دستی تحریر سے قرآن مجید کا نسخہ تیار کرلیا۔ اس طرح انہوں نے ایک تخلیقی اور منفرد کاوش کرکے اپنا نام نمایاں کرلیا۔

استاذ خالد الزہرانی نے ’’ العربیہ ڈاٹ نیٹ‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے اپنے اس بابرکت تجربے سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہ قرآن کریم لکھنے کا خیال مجھے دو سال قبل آیا۔ پھر میں نے قرآن کریم کا نسخہ تلاش کیا اور ہر روز دو صفحات کی شرح سے تحریر شروع کردی۔

انہوں نے ’’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘‘ کو بتاتا کہ جب میں نے لکھنا شروع کیا تو مجھے غلطی کا خوف محسوس ہوا اور میں نے کمپیوٹر فونٹ کے قریب رسم الخط میں لکھنے کا فیصلہ کیا۔ میں نے عربی خطاطی کے بہت سے تربیتی کورسز کئے تھے۔ میں نے ریٹائرمنٹ کے بعد کے وقت کو پورا قرآن لکھنے کے لیے استعمال کرنے کا فیصلہ کیا۔ قرآن کریم کے اس نسخہ کو تحریر کرنے کے بعد اب میں ایک اور قرآن کو مختلف انداز میں لکھ رہا ہوں۔ میں نے اپنے ہاتھ سے لکھ قرآن پاک کا نسخہ سوشل میڈیا پر بھی شیئر کیا ہے جسے بڑی توجہ حاصل ہوئی ہے۔

بہت سے ٹوئٹر اکاؤنٹس نے خالد الزہرانی کی اللہ کے کلام سے محبت میں کئے گئے اس کام کی تکمیل کا جشن منایا۔ خالد الزہرانی نے ہاف ایم ایم کے ایک عام قلم سے قرآن کریم کی تحریر مکمل کی ہے۔ سوشل میڈیا پر ان کے فالوورز نے بڑے پیمانے پر خالد الزہرانی کی قرآن کریم لکھتے ہوئے کی تصاویر اور ویڈیوز شیئر کی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں