سبز کیلوں کو پکانے کے 4 تیز ترین طریقے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سائنسی شواہد پر مبنی کچھ ترکیبیں ہیں جو کیلے کو نقصان پہنچائے بغیر ان کے پکنے کو تیز کرنے میں مدد کر سکتی ہیں۔ ویب سائٹ ’’Eat This Not That ‘‘ کی طرف سے شائع ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق خصوصی ماہرین نے گھر میں کیلے کے پکنے کو تیز کرنے کے لیے تجاویز کا ایک سیٹ فراہم کیا ہے۔ کچھ لوگ سبز کیلے خریدنے کا سہارا لیتے ہیں تاکہ انہیں زیادہ سے زیادہ دیر تک محفوظ رکھا جا سکے۔ سبز کیلوں کو تیزی سے پکانے کے طریقوں پر غور کرتے ہیں۔

1۔ اعلی ایتھیلین پیدا کرنیوالے پھلوں کیساتھ ذخیرہ

جینیفر بالین جنہوں نے بی ایس سی نیوٹریشنسٹ کر رکھا ہے کہتی ہیں کہ ’’ایتھیلین گیس خود کیلے سے پیدا ہوتی ہے اور اس وقت زیادہ مقدار میں ظاہر ہوتی ہے جب کیلے پکنے کی حد تک پہنچ جاتے ہیں‘‘ جب پہلے سے پکے ہوئے پھل سے ایتھیلین گیس نکلتی ہے تو کیلا انزائمز پیدا کرتا ہے جو سیل کی دیواروں کو توڑ دیتے ہیں۔ جس کے نتیجے میں کیلے میں زیادہ گودا بنتا اور کیلے کی مٹھاس بھی بڑھ جاتی ہے۔

اعلیٰ ایتھیلین پیدا کرنے والے پھلوں میں سیب، ایوکاڈو، ٹماٹر، خربوزہ اور کینٹالوپ شامل ہیں، لہذا عام طور پر ایک یا دو سیب یا ٹماٹر کے ساتھ ایک سبز کیلا ڈالنا پکنے کے عمل کو شروع کرنے کے لیے کافی ہو سکتا ہے۔

2۔ کاغذ کی تھیلی کا طریقہ

کاغذ کے تھیلے سے بھی کیلے کو تیزی سے پکانے میں مدد مل سکتی ہے۔ یہ طریقہ ایتھیلین پیدا کرنے والے پھل کے ساتھ کیلے کو متحرک کرنے پر مبنی ہے۔ یہ طریقہ زیادہ توجہ طلب ہوتا ہے۔ بھورے تھیلے میں کیلے کو مضبوطی سے پیک کرنے سے بعد میں ایتھیلین گیسیں اندر پھنس جاتی ہیں اور پکنے کے عمل کو تیز کرتی ہیں۔ زیادہ رفتار کے لیے ایک پکے ہوئے سیب یا ناشپاتی کو اسی کاغذ کے تھیلے میں رکھا جا سکتا ہے۔

3۔ مائکروویو یا اوون

ماہرین سبز کیلے کو جلدی پکانے کے لیے مائیکرو ویو کے استعمال کا بھی مشورہ دیتے ہیں۔ ٹوتھ پک کے ذریعے کیلے کے اطراف میں کچھ سوراخ کرنے کے بعد اسے مائیکرو ویو میں 20 سے 30 سیکنڈ کے لیے گرم کریں۔ ہر مرتبہ اسے چیک کرتے رہیں جب تک کہ یہ مطلوبہ مستقل مزاجی تک نہ پہنچ جائے۔ .

اوون کو بھی اسی مقصد کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے تاہم اوون کو 150 سینٹی گریڈ پر پہلے سے گرم کرنا ضروری ہے اس کے بعد کیلے کو اوون کے اندر بیکنگ شیٹ پر تقریباً 30 منٹ کے لیے رکھا جا سکتا ہے۔

4۔ فریزر کا استعمال

ماہرین کا کہنا ہے کہ زیادہ اور انتہائی کم دونوں درجہ حرارت کیلے میں خلیات اور نشاستہ کے ٹوٹنے کا باعث بنتے ہیں جس کے نتیجے میں ایک نرم ساخت بنتی ہے جو پھل کے پکنے کا مرحلہ ہوتا ہے۔ ریفریجریٹر کے فریزر میں کیلے کو چھلکا ہٹائے بغیر رکھا جا سکتا ہے۔ کیلے کو منجمد ہونے کے کئی گھنٹوں بعد ڈیفروسٹ کیا جاتا ہے۔ اس طرح کیلے پک جاتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں