ہبہ عبوک نے فٹبالر اشرف حکیمی کے ساتھ طلاق کے بعد مالی تصفیے پر خاموشی توڑ دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

جمعرات کو ہسپانوی روزنامے مارکا نے رپورٹ کیا کہ ہبہ عبوک نے ان الزامات کے جواب میں کہ وہ اپنے شوہر اشرف حکیمی سے طلاق کا معاملہ طے کرنے کے لیے 11 ملین ڈالر (10 ملین یورو) کا مطالبہ کر رہی ہیں، خاموشی توڑ دی۔

انہوں نے کہا کہ "یہ ایک مردانہ انا پسندی کی دنیا ہے، اس بات پر غور کرتے ہوئے کہ جب ہم نے اپنا رشتہ شروع کیا تو اس نے کچھ نہیں کمایا تھا، اور میں اس سے زیادہ مشہور تھی۔ تصور کریں،"

"اچھی بات یہ ہے کہ میں اب ان کی باتوں سے متاثر نہیں ہوں،" انہوں نے کہا۔

"میں سمجھدار بننا چاہتی ہوں تاکہ آنے والا کل ہمارے خاندان کو متاثر نہ کرے۔ مجھے انصاف اور عقل پر بھروسہ ہے، جو میری طرف ہے۔"

پچھلے مہینے، مارکا نے اطلاع دی تھی کہ ہبہ عبوک مراکش کی فٹبالر سے ان کی طلاق طے کرنے کے لیے 11 ملین ڈالر کا مطالبہ کر رہی ہیں جبکہ اشرف نے صرف 2.2 ملین ڈالر کی پیشکش کی ہے۔

رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ اس انکشاف کے بعد کہ فٹبالر کی ساری دولت ان کی والدہ کے نام پر ہے ، ہسپانوی ماڈل نے اشرف حکیمی کے خلاف "اپنے ازدواجی اثاثوں میں دھوکہ دہی اور بدعنوانی" کا مقدمہ دائر کرنے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔

پیرس سینٹ جرمین کے کھلاڑی اشرف کو فروری میں ایک 24 سالہ خاتون کی جانب سے ریپ کے ابتدائی الزامات کا سامنا بھی ہے۔

پولیس نے معاملے کی تحقیقات شروع کردی ہیں حالانکہ مبینہ متاثرہ نخاتون کا کہنا ہے کہ وہ سرکاری شکایت درج کیے بغیر صرف "ریپ کا بیان" دینا چاہتی ہے۔

ہبہ عبوک کا کہنا ہے کہ انہوں نے حکیمی سے علاحدگی کا فیصلہ اس الزام سے پہلے کیا تھا لیکن علاحدگی کی وجہ نہیں بتائی۔

مقبول خبریں اہم خبریں