مصنوعی ذہانت پر مبنی چہرے کی سیلفی سے عمر بتانے والی ایپ آگئی

ایپ کو 12 ملین تصاویر کے تجزیہ سے تیار کیا گیا، چہرے کی جلد کو چھ عوامل متاثر کرتے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

نیویارک سٹف میں ماہرین نے مصنوعی ذہانت پر مبنی ایک ایک ایپ تیار کرلی ہے جو چہرے کی سیلفی کی بنیاد پر کسی شخص کی عمر کا اندازہ لگا کر بتا دیتی ہے۔ برطانوی اخبار ‘‘ڈیلی میل’’ کے مطابق ‘‘Face Age’’ ٹول چہرے کی چھ علامات کا تجزیہ کرتا ہے جن میں سوجن، آنکھوں کے گرد حلقے اور جھریاں شامل ہیں۔

چہرہ اس بات کی کھڑکی ہے کہ باقی جسم کتنی جلدی بوڑھا ہو رہا ہے کیونکہ تمباکو نوشی اور دیگر غیر صحت بخش عادات اور آلودگی جلد سے غذائی اجزاء کو ختم کر دیتی ہے جس کی وجہ سے یہ اپنی لچک کھو دیتی ہے اور جھریاں تیزی سے پیدا ہو جاتی ہیں۔ ناقص خوراک چہرے کو بوڑھا کر کے سوزش بھی بڑھا سکتی ہے۔ اسی طرح ناقص خوراک کا کردار جھریوں میں بھی ہو سکتا ہے۔

12 ملین انسانی تصاویر

کمپنی NOVOS کی بنائی گئی مصنوعی ذہانت کی ایپلی کیشن Face Age کے حوالے سے بتایا گیا کہ یہ ایپ انسانی چہروں کی 12 ملین سے زیادہ تصاویر پر انحصار کر رہی ہے ۔ ایپلی کیشن جن چھ عوامل کا جائزہ لیتی ہے وہ آنکھوں کی عمر اور اس کے ارد گرد سوجن، جھریاں، ملائمیت، کرختگ اور چہرے کی لاللی ہیں۔

ٹول استعمال کرنے کے لیے لوگوں کو ایک واضح تصویر اپ لوڈ کرنا ہوگی جس میں ان کا چہرہ مرکز ہو۔ نتائج منٹوں میں ای میل کیے جاتے ہیں۔

ضروری انتباہات

NOVOS نے خبردار کیا ہے کہ ناقص روشنی، کیمرے کا معیار، اور کیمرہ کا زاویہ نتائج کو متاثر کر سکتا ہے۔ نیز نیند کی کمی یا خشک جلد 35 سال کی کم عمر کے صارفین کو ان کی تاریخی عمر کا غلط اندازہ لگانے کا امکان زیادہ ہوتا ہے

مشہور شخصیت کے نتائج

اے آئی کو لیب سیشن کے دوران انسانی تجزیہ کاروں کی طرف سے فراہم کردہ چہروں کی تخمینی عمروں کی بنیاد پر تربیت دی گئی تھی۔ نمونوں کا استعمال کرتے ہوئے اس ایپ کو 12 ملین دیگر انسانی چہروں پر تربیت دی گئی تاکہ اس کے اندازوں کی درستگی کو بہتر بنایا جا سکے۔

جن لوگوں نے نیا ٹول استعمال کیا ہے ان میں یونیورسٹی آف سدرن کیلیفورنیا کے ریڈیولوجسٹ ڈاکٹر رابرٹ لوفکن بھی شامل ہیں۔ ایپ نے ان کے بارے میں بتایا کہ ان کا چہرہ 50 سال کا ہے جب وہ 68 یا 69 سال کا تھا۔ ایک اینٹی ایجنگ بلاگ چلانے والی شخصیت نے کہا کہ ٹول کے اندازے کے نتیجے میں وہ اپنے 18 سال کی عمر سے کم عمر نظر آتے ہیں۔

جوانی کی خصوصیات اور دیگر عوامل

نوجوان چہروں میں گال کی ہڈیاں مکمل اور اچھی طرح سے متعین جبڑے ہوتے ہیں۔ لیکن عمر کے ساتھ یہ خصوصیات آہستہ آہستہ ختم ہوجاتی ہیں۔ یو وی شعائیں، سگریٹ کے دھواں اور آلودگی جلد کی لچک میں بتدریج کمی کا باعث بنتی ہیں ۔ جیسے جیسے چہرے کے پٹھے حرکت کرتے ہیںباریک لکیریں اور جھریاں نمودار ہوتی ہیں جو عمر کے ساتھ ساتھ گہری ہوتی جاتی ہیں۔

اس کے علاوہ درجہ بندی کے دیگر عوامل میں جلد کے خلیات کو دوبارہ پیدا ہونے اور خارج ہونے میں زیادہ وقت لگتا شامل ہے۔ خلیات کے پیدا ہونے میں تاخیر سے جلد کے مردہ خلیات جمع ہو جاتے ہیں جلد کو پھیکا، کھردرا اور کم ہموار کر دیتے ہیں۔ آنکھوں کے گرد تھیلے نمودار ہو سکتے ہیں۔ واضح رہے کہ آنکھوں کے ارد گرد کی یہ علامات نیند کی کمی کی وجہ سے بھی ظاہر ہو سکتی ہیں۔

اہم نکات

NOVOS مشورہ دیتا ہے کہ جلد کی عمر بڑھنے سے بچنے کے لیے سن اسکرین کا استعمال اور غذائی سپلیمنٹس لیے جا سکتے ہیں۔ یہ چیزیں عمر بڑھنے کو کم کرنے میں مدد کر سکتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں