ملکہ الزبتھ دوم کی آخری رسومات پر 162 ملین پاؤنڈ اخراجات آئے

آنجہانی ملکہ کی سرکاری تدفین 19 ستمبر کو ہوئی، 1965 میں ونسٹن چرچل کے بعد برطانیہ میں اپنی نوعیت کی پہلی تدفین تھی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

برطانوی ٹریژری نے جمعرات کو بتایا ہے کہ ملکہ الزبتھ دوم کی تجہیز اور تدفین کی خدمات پر برطانوی حکومت کے تخمینہ کے مطابق 162 ملین پاؤنڈ خرچ ہوئے ہیں۔ یہ تقریبا 200 ملین ڈالر کے برابر رقم بنتی ہے۔

آنجہانی ملکہ کی سرکاری تدفین 19 ستمبر کو ہوئی تھی یہ 1965 میں سابق وزیر اعظم ونسٹن چرچل کی آخری رسومات کے بعد برطانیہ میں اپنی نوعیت کی پہلی ایسی تقریب تھی۔

ملکہ الزبتھ دوم کی آخری رسومات میں دنیا بھر کے رہنماؤں اور معززین نے شرکت کی تھی۔ 8 ستمبر کو ملکہ کی وفات کے بعد 10 روزہ قومی سوگ کا اعلان کیا گیا تھا۔ ملکہ الزبتھ نے 70 سال تک حکومت کی تھی۔

جنازے کے اخراجات جمعرات کو ہاؤس آف کامنز کو بھیجے گئے ۔

ٹریژری کے فرسٹ سیکرٹری جان گلین نے بیان میں کہا کہ حکومت کی ترجیح یہ رہی ہے کہ ان تقریبات کو آسانی سے اور مناسب وقار کے ساتھ آگے بڑھایا جائے اور اس دوران عوام کی حفاظت کو ہر وقت یقینی بنایا جائے ۔ الزبتھ اور ان کے شوہر شہزادہ فلپ ونڈسر کیسل کے سینٹ جارج چیپل میں دفن ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں