12 سال کے بعد شام نے عرب لیگ میں مستقل مندوب مقرر کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک دہائی سے زائد عرصے کی غیر موجودگی کے بعد، شام نے عرب لیگ میں اپنا مندوب اور مصر کے لیے اپنے سفارتی مشن کا نیا سربراہ مقرر کر دیا ہے۔

شامی میڈیا کے مطابق، سفیر حسام الدین آلا کو عرب لیگ میں شام کا مستقل نمائندہ اور قاہرہ میں سفارتی مشن کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے۔

ان کی تقرری عرب لیگ کے اجلاسوں میں شامی وفود کی شرکت اور شام کے صدر بشار الاسد کی سعودی عرب کے شہر جدہ میں ہونے والے حالیہ عرب سربراہی اجلاس میں شرکت کے بعد عمل میں آئی ہے۔

12 سال پہلے بشار الاسد کی جانب سے مخالفین پر تشدد اور خانہ جنگی کے آغاز پر شام کی عرب لیگ میں رکنیت معطل کردی گئی تھی ہے۔

نئے سفیر آلا آٹھ سال تک جنیوا میں اقوام متحدہ کے دفتر اور بین الاقوامی اداروں میں شام کے مستقل نمائندے کے عہدے پر فائز رہ چکے ہیں۔

وہ ویٹیکن اور اسپین میں شام کے سفیر رہے اور وہ نیویارک اقوام متحدہ میں شامی مشن کا حصہ رہ چکے ہیں۔

شام کے وزیر خارجہ فیصل المقداد نے 12 سال کی غیرحاضری کے بعد پہلی بار سرکاری دورے پر گذشتہ یکم اپریل کو مصر کا دورہ کیا جہاں انہوں نے مصری وزیر خارجہ سامح شکری سے تعاون اور ہم آہنگی کے طریقوں اور تعلقات کی بحالی پر تبادلہ خیال کیا تھا۔

مصری وزیر خارجہ نے اپنے شامی ہم منصب کو شام کے بحران کے جلد از جلد ایک جامع سیاسی حل تک پہنچنے کی کوششوں کے لیے اپنے ملک کی مکمل حمایت کا یقین دلایا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں