بیٹی کو اپنا نام دینے اور خرچہ کم کرانے کیلئے ہنٹر بائیڈن عدالتی فیصلے کا منتظر

امریکی صدر کا بیٹا اپنی بیٹی کی کفالت کیلئے ماں کو ماہانہ ہزار ڈالر ادا کرتا جسے کم کرانا چاہتا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکی صدر کے بیٹے ہنٹر بائیڈن ریاست آرکنساس میں ایک مقدمے میں اہم فیصلے کا منتظر ہے کیونکہ اس فیصلے کے دن قریب آتے جا رہے ہیں۔ اس مقدمہ میں ہنٹر نے چائلڈ سپورٹ کو کم کرنے اور اپنی بیٹی کو اپنے نام کا آخری حصہ استعمال کرنے سے روکنے کے لیے درخواست کر رکھی ہے۔

صدر کے بیٹے کو اس ماہ عدالت کے فیصلے اور جولائی میں لندن رابرٹس کے خلاف مقدمے کا سامنا کرنا ہے۔ لندن رابرٹس اس کی 28 اگست 2018 کو پیدا ہونے والی بیٹی کی ماں ہے۔

امریکی اخبار "یو ایس اے ٹوڈے" کے مطابق جج نے مارچ 2020 میں ہنٹر بائیڈن کو چائلڈ سپورٹ کی رقم ادا کرنے کا حکم دیا تھا لیکن ہنٹر نے ستمبر 2022 میں اپنی متغیر آمدنی کی وجہ سے رقم کم کرنے کی درخواست کردی تھی۔ مقدمہ کی تاریخ ملتوی کردی گئی تھی۔ اب اس حوالے سے فیصلہ اس ماہ آنے کی توقع کی جارہی ہے۔

رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ بچی کے نام سے متعلق تنازع میں ایک اور اہم نکتہ یہ بھی ہے کہ بیٹی کی والدہ چاہتی ہیں کہ اس خاندان کی سیاسی شہرت اور تجارتی کامیابی کی وجہ سے اس کی بیٹی کو بائیڈن خاندان کے نام سے جوڑا جائے۔ لیکن ہنٹر نے اس کی مخالفت کی ہے کیونکہ بیٹی کو خاندان کا نام دینے سے اسے مستقبل میں کسی سیاسی جنگ کا سامنا کر پڑ سکتا ہے۔

یہ کیس ہنٹر بائیڈن کو درپیش قانونی چیلنجوں میں سے ایک ہے۔ یہ کیس کانگریس میں ریپبلکنز کے لیے تشویش کا باعث بن گیا ہے جو اس بات کی تحقیقات کر رہے ہیں کہ اس کیس نے صدر جو بائیڈن کو کیسے متاثر کیا ہے۔

ہاؤس ریپبلکنز اس بات کی تحقیقات کر رہے ہیں کہ آیا ہنٹر بائیڈن کو منافع بخش کاروباری سودوں کے ذریعے انتظامیہ پر ان کے اثر و رسوخ کا بدلہ دیا گیا ہے ۔ ان الزامات کی ہنٹر بائیڈن اور وائٹ ہاؤس نے تردید کردی ہے۔

واضح رہے ہنٹر بائیڈن کی سابقہ بیوی رابرٹس نے مئی 2019 میں مقدمہ دائر کیا تھاجس میں ہنٹر بائیڈن کی ولدیت کا تعین کرنے اور بچوں کے لیے مدد حاصل کرنے کی کوشش کی گئی۔

بائیڈن نے ابتدا میں مزاحمت کی لیکن جنوری 2020 میں ان کی ولدیت کی تصدیق ہو گئی۔ انہوں نے اپنی بچی کو سپورٹ کرنے کا معاہدہ بھی کرلیا۔ لیکن ہنٹر بائیڈن نے بعد میں بچی کی امداد کی رقم میں کمی کی درخواست دے کر کیس کو دوبارہ کھول دیا تھا۔ ان کے وکیل برینٹ لینگڈن نے کہا کہ ہنٹر بائیڈن کے مالی حالات میں بنیادی تبدیلی آگئی ہے۔

مئی میں ایک سماعت کے دوران اٹارنی ایبے لوول نے انکشاف کیا تھا کہ ہنٹر بائیڈن بچوں کی مدد کے لیے ماہانہ 20 ہزار ڈالر ادا کرتے ہیں اس طرح وہ سالانہ 7 لاکھ 75 ہزار ڈالر اپنی بچی کی کفالت کا ادا کرتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں