دنیا کی 10 بڑی کمپنیوں میں 8.8 ملین افراد کام کرتے: رپورٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

تکنیکی ترقی، پروسیس آٹومیشن اور مصنوعی ذہانت کے باوجود انسانی وسائل دنیا بھر کی بہت سی قیمتی اور بڑی کمپنیوں میں بنیادی ستون کی نمائندگی کر رہے ہیں۔

دنیا کی کچھ بڑی کمپنیوں کے پاس پہلے سے ہی بہت بڑی افرادی قوت موجود ہے جو دنیا بھر میں لاکھوں افراد کو نوکری فراہم کر رہی ہیں۔ ملازمین کی تعداد کے لحاظ سے دنیا کی دس بڑی کمپنیوں کا جائزہ لیا جائے تو حیران کن تفصیلات سامنے آتی ہیں۔

وال مارٹ آمدنی کے لحاظ سے دنیا کی سب سے بڑی کمپنی ہے اور ملازمین کی تعداد کے لحاظ سے بھی سب سے بڑی کمپنی یہی ہے۔ اس کمپنی کے دنیا بھر میں 2.3 ملین سے زیادہ ملازمین ہیں۔ وال مارٹ کے ملازمین کی اکثریت کمپنی کے سٹورز اور گوداموں میں کام کرتی ہے۔

ایمیزون دنیا کی دوسری بڑی کمپنی نے جس میں 15 لاکھ سے زیادہ افراد کام کر رہے ہیں جن میں سے زیادہ تر دنیا بھر میں کمپنی کے گوداموں میں بھی کام کرتے ہیں۔ ایمیزون - ای کامرس کی بڑی کمپنی ہے اور یہ آمدنی کے اعتبار سے سعودی عرب کی آرامکو کمپنی کے بعد دنیا کی تیسری بڑی کمپنی ہے۔

ملازمین کی تعداد کے اعتبار سے تیسرے نمبر پر تائیوان کی کمپنی فوکس کون آتی ہے۔ آئی فونز فراہم کرنے والی اس کمپنی میں تقریباً 8 لاکھ 26 ہزار افراد کام کرتے ہیں۔

ایکسینچر دنیا کی سب سے بڑی آؤٹ سورسنگ کمپنی ہے۔ یہ ایک عالمی انتظامی مشاورتی اور پیشہ ورانہ خدمات کی فرم ہے جو مشاورتی، سٹریٹجک، ڈیجیٹل، ٹیکنالوجی اور آپریشنل خدمات فراہم کرتی ہے۔ ستمبر 2009 کے آغاز سے کمپنی کو ڈبلن آئرلینڈ میں ہیڈکوارٹرز لینے کے لیے دوبارہ تشکیل دیا گیا تھا۔ یہ کمپنی سب سے بڑی 500 کمپنیوں کی "فارچیون 500" کی فہرست میں شامل ہے۔ اس کے ملازمین کی تعداد 7 لاکھ اور 38 ہزار ہے۔

جرمن کمپنی ووکس ویگن ملازمین کی تعداد کے اعتبار سے دنیا کی پانچویں بڑی کمپنی ہے۔ یہ پیداواری یونٹس کی تعداد کے لحاظ سے دنیا کی دوسری سب سے بڑی کار کمپنی ہے۔ اس کے ملازمین کی تعداد 6 لاکھ 45 ہزار سے زیادہ ہے۔

کئی صنعتوں میں کام کرنے والی بھارتی کمپنی "ٹاٹا" کا نمبر چھٹا ہے اور اس کے ملازمین کی تعداد 6 لاکھ 16 ہزار ہے۔

باقی کمپنیوں میں جرمن پوسٹ، امریکی شپنگ کمپنی یو پی ایس، کروگر اور ہوم ڈپو شامل ہیں۔ دنیا کی ٹاپ ٹین کمپنیوں میں ملازمین کی کل تعداد 8.8 ملین سے زیادہ ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں