میسجز شیئر: امریکی ارب پتی بلوم کیسے اصرار کے باوجود آبدوز ٹائٹن میں سوار نہیں ہوئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

آبدوز "ٹائٹن" کے دھماکے کی پوری دنیا کے ذرائع ابلاغ میں گونج ہے۔ تاریخی بحری جہاز ٹائی ٹینک کا ملبہ دیکھنے کے لیے آبدوز میں جانے والے پانچ افراد کی موت پر دنیا بھرمیں بات چیت جاری ہے اور اس واقعہ کی تحقیقات کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔ اسی دوران واقعہ سے متعلق مزید تفصیلات بھی سامنے آرہی ہیں۔

معلوم ہوا ہے کہ آبدوز کی سکیورٹی پر تحفظات کی وجہ سے معروف امریکی ارب پتی جے بلوم نے اس سفر پر جانے سے انکار کردیا تھا اور خوش قسمتی سے وہ اپنی جان بچانے میں کامیاب ہوگئے۔ جے بلوم نے بتایا ہے کہ آبدوز ٹائٹن کو چلانے والی ’’اوشن گیٹ ایکسپیڈیشنز‘‘ کمپنی کے سی ای او سٹاکٹن رش نے ان سے ساتھ چلنے پر اصرار کیا تھا تاہم انہوں نے ساتھ جانے سے انکار کردیا تھا۔

جے بلوم نے سٹاکٹن رش سے میسجز میں ہونے والی اپنی بات چیت کی سکرین شارٹس شیئر کردیے ہیں۔ ان میسجز سے معلوم ہوتا ہے کہ رش کی طرف سے دی گئی تمام یقین دہانیوں کے باوجود سکیورٹی خدشات کی وجہ سے جے بلوم نے ایڈونچر میں حصہ لینے سے انکار کر دیا۔

جے بلوم نے کہا پہلے میں نے اور میرے بیٹے کو سفر پر جانا تھا۔ میرے انکار کے بعد ہماری دو سیٹوں پر پاکستانی نژاد برطانوی ارب پتی شہزادہ داؤد اور ان کے 19 سالہ بیٹے سلیمان کو ان دو سیٹوں پر لے جایا گیا۔

فیس بک پر پوسٹ کیے گئے پیغامات میں رش کی جانب سے بلوم کو "ٹائٹینک" جہاز کے ملبے کو دیکھنے کے لیے سفر میں شرکت کے لیے راضی کرنے کی کوششوں کا انکشاف ہوا۔ یہاں تک مرحوم رش نے جے بلوم کو ایک بڑی رعایت دے دی اور کہا کہ صرف ایک لاکھ ڈالر فی کس کے حساب سے وہ سفر کر سکتے ہیں۔ تاہم جے بلوم نے رش کو بتایا کہ ان کا بیٹا اس سفر سے خوفزدہ ہے کیونکہ بہت سے عوامل کی وجہ سے آبدوز کی حفاظت خطرہ میں ہے۔

بات چیت گزشتہ فروری کی 3 تاریخ تک جاتی ہے۔ رش نے بلوم سے پوچھا کہ کیا وہ اس سفر میں دلچسپی رکھتا ہے کیونکہ وہ ایک دلچسپی رکھنے والے جوڑے کی تلاش میں تھا۔ رش نے جے بلوم سے موزوں ترین تاریخ کے بارے میں بھی پوچھا۔

تاہم بلوم نے اس بہانے معذرت کرلی کہ اس کے بیٹے کے ایک دوست نے خراب چیزوں کی تلاش کی تھی اور اس حوالے سے خوف بیان کیا تھا۔ میرا بیٹا اس تجربے سے گزرنا چاہتا ہے لیکن خوفزدہ ہے۔

اس جواب کے بعد رش نے بیٹے کے ساتھ ویڈیو کال کرنے کا مطالبہ کیا تاکہ اسے یقین دلایا جا سکے کہ یہ خیالی خوف سے زیادہ کچھ نہیں۔

تاہم باپ نے واپس آکر تصدیق کی کہ اس کے بیٹے نے اس گہرائی میں سمندری حیات اور آبدوز کو لاحق خطرات کے بارے میں تحقیق کی ہے ۔ امکان ہے کہ امبر وہیل گاڑی پر حملہ کرے گی یا کوئی بہت بڑا سکویڈ اسے پکڑ لے گا۔

رش نے جواب دیا یہ مضحکہ خیز خیالات ہیں۔ رش نے کہا کہ دباؤ 100 ملین پاؤنڈ سے زیادہ ہے اور کوئی وہیل یا سکویڈ آبدوز کو خطرہ نہیں بنا سکتا اور میں نے وہاں کوئی واضح خطرہ نہیں دیکھا۔ رش نے مزید تسلی دلائی اور کہا کہ یہ ہیلی کاپٹر پر سفر کرنے یا کچھ گہرائیوں میں غوطہ لگانے سے بھی زیادہ محفوظ سفر ہے۔ رش نے بتایا کہ 35 سال سے غیر فوجی آبدوزوں میں کوئی حادثہ ریکارڈ نہیں کیا گیا۔

باقی ٹیکسٹ میسجز میں رش نے جے بلوم سے بار بار پوچھا کہ کیا اس نے ڈائیونگ ٹرپ میں حصہ لینے کے لیے اپنا ذہن بنا لیا ہے یا نہیں۔

بات یہیں نہیں رکی بلکہ رش اور بلوم نے یکم مارچ کو لاس ویگاس کے ہوٹل میں ملاقات کی۔ وہ وہاں ٹائی ٹینک کی نمائش میں لنچ کرنے گئے تھے۔

یہاں گفتگو میں رش نے کہا یہ سفر اتنا ہی محفوظ ہے جتنا سڑک پار کرنا ہوتا ہے۔


مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں