میں اور میرے خاندان نے 20 سال تک گدھے کا گوشت کھایا: مصری صحافی

مشہور مصری صحافی کی والدہ ایک دن قصائی کی دکان بند ہونے سے حیران رہ گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصر کے مشہور صحافی نے حیران کن طور پر انکشاف کیا ہے کہ علم نہ ہونے کے باعث میں اور میرا خاندان 20 سال تک گدھے کا گوشت کھاتا رہا ہے۔

مشہور مصری صحافی محمود سعد نے اپنے فیس بک پیج پر ایک ویڈیو میں میں کہا وہ اور اس کا خاندان 20 سال تک ایک قصاب کے دھوکے میں آنے کے بعد غفلت میں اس سے 20 سال تک گدھے کا گوشت لے کر کھاتے رہے۔ قصائی کی دکان ان کی رہائش گاہ میں تھی۔

مصری صحافی نے مزید بتایا کہ میری ماں اس قصاب سے گوشت خریدتی تھی اور ایک دن 20 سال بعد حسب معمول اس سے گوشت خریدنے گئی تو حیران رہ گئیں کہ دکان بند تھی

ہم نے تحقیق کی تو معلوم ہوا کہ دکان کی بندش کی وجہ یہ تھی کہ حکام کو دکان میں گدھے کا گوشت ملا تھا۔ اس بات کی تصدیق کی گئی تھی کہ قصاب گزشتہ کئی برسوں سے اپنے گاہکوں کو گدھے کا گوشت فروخت کر رہا تھا۔ اس نشاندہی کے بعد ہم حیران رہ گئے، سارا خاندان سکتے میں آگیا۔ ہمیں یقین نہیں آرہا تھا کہ ہمارے ساتھ کیا ہوا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں