میٹا کے’تھریڈز‘ کاآغاز؛ مارک زکربرگ کی 11 سال میں پہلی ٹویٹ، ایلون مسک پر طنز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

میٹا پلیٹ فارمز انکارپوریٹڈ کے بانی مارک زکربرگ نے ٹویٹر کا متبادل پلیٹ فارم تھریڈز متعارف کرایا ہے اور ایک دہائی سے زیادہ عرصے میں اپنی پہلی ٹویٹ کی ہے جس میں ایلون مسک پر طنز کی ہے۔

میٹا کے انسٹاگرام نے بدھ کے روز باضابطہ طور پر تھریڈز کی رونمائی کی۔اسے ایلون مسک کی ملکیت میں آنے کے بعد آئے دن تبدیلیوں کی زد میں آنے والے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ٹویٹرکا اب تک کا سب سے بڑا خطرہ سمجھا جاتا ہے۔اس کے چند گھنٹے بعد زکربرگ نے اسپائیڈر مین کی تصویر ٹویٹ کی جس میں وہ آمنے سامنے دکھائی دے رہے ہیں۔

زکربرگ کی یہ سنہ 2012 کے بعد ان کی پہلی ٹویٹ معلوم ہوتی ہے اور اس سے دو ہفتے قبل ایلون مسک نے میٹا کے بانی کو پنجرے کی لڑائی کا چیلنج دیا تھا۔ مسک نے کچھ ہی دیر بعد انسٹاگرام کے بارے میں اپنا جواب دیا ہے۔

تھریڈز ٹویٹر پر غلط اقدامات اور تجربات کے ایک سلسلے کا فائدہ اٹھا سکتاہے۔ایلون مسک نے گذشتہ سال اکتوبر میں ٹویٹرکمپنی کو 44 ارب ڈالر میں خرید کیا ہے،تب سے انھوں نے اس کمپنی کے ہزاروں ملازمین کو فارغ کیا ہے ، مواد کو اعتدال میں رکھنے کی پالیسیوں میں نرمی کی ہے اور صارفین اور مشتہرین کو تکنیکی چیلنجوں سے دوچار کردیا ہے۔

انھوں نے تازہ ترین متنازع تبدیلی یہ کی ہے کہ ٹویٹر پر صارفین کی روزانہ دیکھی جانے والی ٹویٹس کی تعداد کو محدود کردیا ہے-تاہم مسک نے اس اقدام کو ڈیٹا اسکریپرز اور بوٹس کو روکنے کے لیے "عارضی" قراردیا ہے۔

زکربرگ نے تھریڈز پر ایک پوسٹ میں کہا کہ عوامی بات چیت کی ایک ایپ ہونی چاہیے جس پر ایک ارب سے زیادہ افراد ہوں۔انھوں نے کہا کہ ’’ٹویٹر کو ایسا کرنے کا موقع ملا لیکن اس نے اس سے فائدہ نہیں اٹھایا۔امید ہے کہ یہ کام ہم کریں گے‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں