سانس روک دینے والا منظر، سعودی آسمان پر دو طیارے 60 میٹر کے فاصلے پر آگئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سوشل اور میڈیا پلیٹ فارمز پر دو طیاروں کے وسطی سعودی عرب کے مشہور پہاڑوں کے اوپر سے گزرنے کی ایک دلچسپ ویڈیو بڑے پیمانے پر گردش کرنے لگی۔ ویڈیو میں دونوں طیاروں کو ایک دوسرے کے قریب آتے ہوئے دکھایا گیا۔ سانس روک دینے والے منظر میں دو طیاروں کو انتہائی قریب ہوتے دیکھا گیا۔ اس کے بعد طیارے ریاض کے کنگ خالد انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر بحفاظت اتر گئے۔

پہلا طیارہ سعودی ایئرلائنز کا تھا۔ اس کو پائلٹ کیپٹن ممدوح بخاری اڑا رہے تھے۔ دوسرا طیارہ فلائی ناس ایئر لائنز کا تھا۔ اس کے پائلٹ کیپٹن فہد الیحییٰ تھے۔

سعودی ایئر لائنز کے آفیشل اکاؤنٹ نے "ٹویٹر" کے ذریعے وضاحت کی کہ دونوں طیاروں کے درمیان اونچائی صرف 60 میٹر تھی۔ اس ویڈیو پر بہت سے افراد نے تنقید کی اور کہا صرف 60 میٹر کا فاصلہ بہت بڑا خطرہ تھا۔ خاص طور پر اس صورت میں جب طیارہ ایسا کرنٹ پیدا کرتا ہے جو دوسرے کو متاثر کر سکتا ہے۔

سول پائلٹ اور ایوی ایشن میڈیا میں سرگرم کارکن عبداللہ الغامدی نے تجزیہ کیا کہ ایسے کام قانون ساز اتھارٹی سے اجازت حاصل کرنے کے علاوہ نہیں کیے جاتے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں