سعودی عرب میں قدرتی ذخائر کے انتظام بڑھانے کے لیے نیا تکنیکی نظام شروع

پروگرام IBEX V1.0 ذخائر کو محفوظ کرنے کا انتظام اور نگرانی ، "گرین لسٹ" سرٹیفیکیشن میں درج بنیادی معیار کی فراہمی کی پیمائش کرتا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

العلا گورنریٹ کے رائل کمیشن نے انٹرنیشنل یونین فار کنزرویشن آف نیچر (IUCN) کے تعاون سے ایک ایسے نئے تکنیکی نظام کے آغاز اعلان کردیا جو بین الاقوامی اشارے کے مطابق "گرین لسٹ" کے معیارات کو حاصل کرنے کے لیے فطرت کے ذخائر کے تحفظ اور اس کے انتظام کی صلاحیت کو بڑھانے کے عمل کا جائزہ لیتا ہے۔

پروگرام IBEX V1.0 تحفظ کے موجودہ کام کی نگرانی کرتے ہوئے IUCN کے "گرین لسٹ" سرٹیفیکیشن میں طے شدہ بنیادی معیار کی تعمیل کی پیمائش کرتا ہے۔ اسی طرح یہ پروگرام محفوظ علاقوں کے کام کاج کا اندازہ لگانے کے لیے انتظام اور نگرانی بھی کرتا ہے۔

"گرین لسٹ" کے معیارات پودوں اور جانوروں کی خطرے سے دوچار انواع کے لیے موثر اور جامع تحفظ فراہم کرنے کے لیے بہترین عالمی طریقہ کار ہیں۔

یہ مختلف محفوظ علاقوں میں ماحولیاتی تحفظ کے منصوبوں کو پائیدار نتائج حاصل کرنے میں مدد کے لیے ایک رہنما فراہم کرتا ہے۔ مخصوص معیارات پر عمل کرنے سے ماحولیاتی نظام کو ماحولیات کو بہتر بنانے میں اپنا حصہ ڈالنے کا موقع ملتا ہے۔

"گرین لسٹ" میں متعدد معیارات شامل ہیں۔ ان میں انسانی کیڈرز کا مختلف شراکت داروں کے ساتھ رابطہ، ذخائر کو محفوظ بنانے کے لیے منصوبہ بندی کرنا، قدرتی ماحول کے تحفظ کے میدان میں موثر انتظام کرنا، موسمیاتی تبدیلیوں سے مختلف چیلنجوں سے نمٹنا اور صحت اور دیگر امور سے متعلق چیلنجوں سے نمٹنے کے نمایاں معیارات شامل ہیں۔ نیا نظام سپروائزرز کو خود تشخیص کے متعلق تفصیلی معلومات فراہم کرنے کا موقع فراہم کرتا ہے۔

12
12

یہ نظام رائل کمیشن فار العلا کی وائلڈ لائف اینڈ نیچرل ہیریٹیج ٹیم کو فیلڈ ورک کے فریم ورک میں موجود تکنیکوں سے فائدہ اٹھانے کا موقع دیتا ہے۔ اس سے وہ اس منصوبے کے کورس اور اثر کو دستاویز کرنے، مطالعہ کرنے اور جانچنے کی اجازت دیتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں