مصر میں سرکاری ملازمین ہر اتوار کو آن لائن کام کیوں کریں گے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصر میں حکومت نے ان تمام سرکاری ملازمین کو جو عوام کو براہ راست خدمات فراہم نہیں کرتے ہیں، ہر اتوار کو گھر سے کام کرنے کا حکم دیا ہے۔

مصر کے وزیر اعظم مصطفیٰ مدبولی نے توانائی کی بچت کے لیے بعض سرکاری محکموں کے ملازمین کے لیے آن لائن سسٹم (ریموٹ ورک) شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس فیصلے پر عمل درآمد اتوار 6 اگست سے شروع ہو جائے گا اور مہینے کے آخر تک سرکاری اداروں اور سروس سیکٹر میں کام ہر اتوار کو صرف ’’آن لائن‘‘ہو گا۔

وزیر برائے بجلی اور پیٹرولیم کی موجودگی میں کی گئی ایک پریس کانفرنس میں ڈاکٹر مصطفی مدبولی نے نجی کمپنیوں کو بھی ایسا ہی طریقہ کار اپنانے کی ترغیب دی۔

اس کے علاوہ اس بات پر بھی اتفاق کیا گیا کہ کھیل کے میدانوں میں بجلی کے استعمال کو کم کرنے کے لیے کھیلوں کے میچ غروب آفتاب سے پہلے منعقد کیے جائیں گے۔

خیال رہے کہ مصر ان دنوں شدید گرمی کی لہر کا سامنا کر رہا ہے اور توقع ظاہر کی گئی ہے کہ اگست کے مہینے میں بے مثال درجہ حرارت کا مشاہدہ کیا جائے گا۔ مصری وزیر اعظم نے اس بات کی تردید کی کہ ملک گیس کی کمی کا شکار ہے، یا ظہر فیلڈ کو بحران کا سامنا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں