'موتیا سرکار' میں اداکاری منیب بٹ کا 'سوہنے منڈے' کا طویل تصور ختم کر دے گی

31 سالہ اداکار ’موتیا سرکار‘ میں ایسے دلال کا کردار ادا کریں گے جو روحانی تبدیلی سے گزرتا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
5 منٹس read

پاکستانی اداکار منیب بٹ نے کہا ہے کہ ان کے آئندہ پراجیکٹ 'موتیا سرکار' میں ان کے ظاہری نقوش کے ساتھ تجربات کیے گئے ہیں جو ان کے حسبِ معمول "سوہنے منڈے" کے تصور سے مختلف ہیں۔

2013 میں اداکاری کے سفر کا آغاز کرنے اور 2018 میں ڈرامہ سیریل 'کوئی چاند رکھ' سے شہرت حاصل کرنے والے بٹ نے اس کے بعد یاریاں'، 'تیرے آنے سے'، اور 'قلندر' سمیت متعدد ڈراموں میں مرکزی کردار ادا کیا ہے۔ اور حال ہی میں ختم ہونے والی سیریز 'سر راہ' میں انہوں نے ایک انٹرسیکس اسسٹنٹ کمشنر کا کردار ادا کیا۔

تاہم صرف اسی دفعہ اداکار نے ڈرامہ موتیا سرکار میں اپنے دلکش انداز اور شکل و صورت کے ساتھ نیا تجربہ کرنے کا فیصلہ کیا جو اس ماہ نشر کیا جائے گا۔ 31 سالہ نوجوان منیب بٹ موتیا نامی ایک دلال کا کردار ادا کرتے نظر آئیں گے جو ڈرامے کی کہانی بےنقاب ہونے کے ساتھ روحانی تبدیلی سے گزرتا ہے۔

عرب نیوز کو دیے گئے ایک خصوصی انٹرویو میں بٹ نے بتایا کہ بالوں میں تیل لگانے، بالیاں اور تعویذ پہننے کے علاوہ یہ ان کا اپنا خیال تھا کہ کردار کی رنگت گہری رکھی جائے۔

انہوں نے عرب نیوز کو بتایا۔ "ابتدا میں جب مجھے موتیا کے کردار کی پیشکش ہوئی، اس کردار کا نام موتیا تھا۔ موتیا بنیادی طور پر دلال تھا۔ اور پوری کہانی اس کے دلال سے ایک روحانی آدمی میں تبدیل ہونے کے بارے میں ہے۔"

انہوں نے کہا۔ "لہذا، کچھ خیالات تھے جن پر میں نے ڈائریکٹر سے بات کی اور انہوں نے کہا ٹھیک ہے۔ میرے چہرے کی رنگت اور مجھے گہرا بھورا رنگ دینا، یہ میرا آئیڈیا تھا۔ تو میں نے سوچا یہ ایسی چیز ہے جس میں ہم میری شکل کے ساتھ تجربہ کر سکتے ہیں۔"

بٹ کے مطابق موتیا سرکار 70 یا 80 کی دہائی کا ایک پیریڈ ڈرامہ (ماضی کی کہانی) ہوگا۔ کہانی میں موتیا، اس کی ماں، بہن اور اس کی محبت کو دکھایا گیا ہے - یہ سب ہیرا منڈی سے ہیں۔

اداکار نے کہا۔ "یہ ایک خوبصورت کہانی ہے۔"

بٹ نے بیایا کہ موتیا سرکار کے بعد وہ سیاسی رہنما کا ایک ایسا منفی کردار ادا کریں گے جو ان کے مطابق ان کا "خواب" ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ جلد ہی اس کردار کے لیے معاہدہ کریں گے۔

بٹ نے کہا۔ "منفی کردار میں کارکردگی کا بہت زیادہ مارجن ہوتا ہے۔ ڈرامہ جلد ہی فلور پر شوٹ کے لیے چلا جائے گا اور چار سے پانچ ماہ میں آن ایئر ہوگا۔"

31 سالہ اداکار جو اکثر ٹی وی شوز میں اپنے بیانات کی وجہ سے تنازعات میں گھرے رہتے ہیں، نے 2021 کے ایک واقعے کے بارے میں بھی بات کی جس کی وجہ سے ندا یاسر کے مارننگ شو میں انہیں ان کے تبصروں پر شدید ردعمل کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ ان تبصروں میں انہوں نے کہا تھا کہ "بیویوں کو اپنے شوہر کی دوسری شادی سے ڈرنا چاہیے۔" ابھی حال ہی میں وہ یہ کہہ کر نتقید کا نشانہ بنے تھے کہ یہ ان کے گھر کی ایک "روایت" ہے کہ گھر کی عورتیں کھانا پکاتی ہیں۔

اداکار نے کہا۔ "جب آپ کو ان چیزوں کا تجربہ ہوتا ہے تو سمجھ آتی ہے کہ آپ کو اپنے الفاظ میں محتاط رہنا ہوگا کیونکہ سوشل میڈیا کے کچھ ایسے صفحات ہیں جو تنازعات پر چلتے ہیں۔ وہ اس سے کچھ بھی مطلب نکال لیں گے۔ آپ کہتے کچھ ہیں، اور وہ بات ایسے پیش کی جاتی ہے جو آپ کا مطلب نہیں ہوتا۔ لوگوں پر اثر رکھتے ہوئے جبکہ لاکھوں کی تعداد میں ہمارے پیروکار ہوں تو ہمیں اپنے الفاظ میں زیادہ ذمہ دار ہونا چاہئے کیونکہ ہم جو بھی کہیں گے لوگ اسے سنیں گے۔"

بٹ کی اہلیہ ایمن خان بھی اداکار تھیں لیکن اب وہ 11.5 ملین فالوورز کے ساتھ سوشل میڈیا کی ایک متاثر کن شخصیت ہیں جو پاکستانی اداکاروں میں فالوورز کی تعداد کے لحاظ سے دوسرے نمبر پر ہیں۔ منیب بٹ نے کہا کہ ایک مشہور جوڑی ہونے کے ناطے وہ اس بات پر "نگاہ" رکھتے ہیں کہ وہ سوشل میڈیا پر (اپنی زندگی کے بارے میں) کس حد تک انکشاف کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا۔ "ہم سوشل میڈیا پر سب کچھ شیئر کرنے سے خود کو روکتے ہیں۔ ہم اپنی زندگی کا ایک بہت ہی محدود حصہ اپنے مداحوں اور پیروکاروں پر ظاہر کرتے ہیں۔ ابتدا میں ہم عمل (بیٹی) کی تصاویر سوشل میڈیا پر شیئر ہونے سے مطمئن نہیں تھے۔ دو سال کی ہونے کے بعد ہم نے اس کی تصویریں پوسٹ کرنا شروع کیں۔ اس کی ہم سے زیادہ فین فالوونگ ہے۔ میں دیکھتا ہوں کہ بہت سے لوگ میرے گھر آتے ہیں، بہت سے لوگ عمل سے بات کرنے کے لیے مجھے کال کرتے ہیں۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں