بہتر صحت کے لیے آنتوں کے لیے فائدہ مند ناشتہ کے معیارات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ناشتہ اس توانائی کو حاصل کرنے میں مدد کرتا ہے جس کی جسم کو دن شروع کرنے کے لیے درکار ہوتی ہے۔ اس کے علاوہ یہ ایسے غذائی اجزاء حاصل کرنے کا بہترین موقع ہے جو آنتوں کی صحت کو فروغ دیتے ہیں۔

فائبر، پری بائیوٹکس اور پروبائیوٹکس صحت مند آنتوں کے لیے ضروری ہیں۔ اس لیے پودوں پر مبنی غذائیں جیسے پھل اور بیج اور پروبائیوٹک سے بھرپور غذا جیسے دہی کو ناشتے میں شامل کرنا آپ کے نظام ہاضمہ کو مجموعی بہتر حالت میں رکھ سکتا ہے۔ دلیا کے ساتھ بلیو بیریز اور اخروٹ کا اضافہ آپ کے پیٹ کو بھرنے کا ایک آسان طریقہ ہو سکتا ہے۔ آنتوں کی صحت سے قوت مدافعت اور دماغی صحت بھی بہتر ہوتی ہے۔

آنتوں کی صحت کا اثر ہاضمے سے بالاتر ہے۔ تحقیق کے نتائج جن میں گٹ میں 2022 میں شائع سائنسی جائزہ بھی شامل ہے، ظاہر کرتے ہیں کہ آنت کا مائیکرو بایوم مدافعتی صحت کو بھی متاثر کرتا ہے۔ آنت کی صحت کو دماغی صحت کا کلیدی جزو سمجھا جاتا ہے۔

متنوع خوراک

اس لیے معدے کے ماہر، علاج معالجے کے اینڈوسکوپی کے ماہر اور جدید نگہداشت کے ماہر پروفیسر دیپک وڈاڈا کا کہنا ہے کہ متنوع غذا کھانے سے آنتوں کی صحت کو فروغ دینے میں مدد ملتی ہے۔ اگر کسی شخص کو نظام انہضام کی بیماری نہ ہو تب بھی کھانا تیار کرتے وقت آنت کی صحت کے حوالے سے غور کرنا ضروری ہے۔

ناشتے کے لیے ترجیح

سامینا قریشی جو ایک رجسٹرڈ غذائی ماہر ہیں کے مطابق ناشتہ نہ چھوڑنا ایک شخص کو اعلیٰ فائبر والی غذاؤں سے جسم کو ایندھن فراہم کرنے کا ایک بہترین موقع فراہم کرتا ہے۔ یہ ناشتہ طویل مدتی معدے کی صحت کو سہارا دیتا ہے۔ ناشتہ کرنے سے نظام ہاضمہ بھی متحرک رہتا ہے۔

جرنل فرنٹیئرز ان اینڈو کرائنولوجی میں شائع ہونے والی 2023 کی ایک تحقیق کے مطابق ناشتہ چھوڑنا پری ذیابیطس کے بڑھتے ہوئے خطرے سے منسلک ہو سکتا ہے۔ خاص طور پر ان لوگوں کے لیے جو طبی موٹاپے کا شکار ہیں۔ ناشتہ کرنے سے دل کی بیماری، فالج اور ٹائپ 2 ذیابیطس جیسی دائمی بیماریوں کا خطرہ کم ہوتا ہے۔ معدے کے ماہرین کی طرف سے آنتوں کو فائدہ دینے والے ناشتے کے لیے تجویز کردہ اہم غذائی اجزا یہ ہیں۔

1. فائبر کھائیں

فائبر نہ صرف آنتوں کی صحت بلکہ مجموعی صحت کے لیے سب سے اہم غذائی اجزاء میں سے ایک ہے۔ اس وجہ سے سامینا قریشی آپ کے ناشتے میں فائبر کو ترجیح دینے کا مشورہ دیتی ہیں۔ ان کے بہ قول فائبر خون میں شکر اور کولیسٹرول کی سطح کو کنٹرول کرنے میں مدد کر سکتا ہے۔ یہ پیٹ بھرنے اور تسکین کے جذبات پیدا کرتا اور آنتوں کی باقاعدہ عادات کی حمایت کرتا ہے۔

2. نباتاتی خوراک شامل کریں

ڈاکٹر سامینا قریشی مزید کہتی ہیںکہ پلانٹ فوڈز میں موجود پری بائیوٹک فائبر مائیکرو بایوم میں پروبائیوٹکس کے لیے خوراک فراہم کرکے آنتوں کی صحت کو سہارا دیتے ہیں۔ اس لیے نباتاتی خوراک صحت مند ناشتے کا لازمی جزو ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں