دماغی صحت اور وزن میں کمی کے لیے 10 سپر فوڈز ضرور استعمال کریں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
6 منٹس read

انسانی تمدن کی ارتقاء کے ساتھ بعض غذائیں اپنی خصوصیات کے سبب "سپر فوڈ" کے طور پر جانی گئی ہیں۔ یہ قدرتی کھانے غذائی اجزاء کا مکمل پیکج سمجھے جاتے ہیں۔

اگرچہ اس بات کا تعین کرنے کے لیے کوئی تعریف یا معیار نہیں ہے کہ آیا کوئی چیز سپر فوڈ ہے یا نہیں، تاہم، امریکی نیوٹریشنسٹ فرانسس لارجمین روتھ نے ایک رپورٹ میں اس حوالے سے کچھ انکشافات کیے ہیں۔

سپر فوڈ کیا ہے؟

ماہرین صحت کے مطابق کسی کھانے کو "سپر فوڈ" کہا جاسکتا ہے اگر یہ:

1. صحت کا کوئی ایک بڑا فائدہ فراہم کرتا ہے، جیسے دل کی بیماری کے خطرے کو کم کرنا یا مدافعتی نظام کو بہتر بنانا۔

2. اس میں ایک سے زیادہ اہم غذائی اجزاء ہوتے ہیں، جیسے کیلشیم اور وٹامن ڈی۔

3. ایسے فوائد کی پیشکش کرتا ہے جو صرف صحت مند ہونے سے بڑھ کر ہیں، کیونکہ سپر فوڈز کو فائدہ مند اجزاء کا "مکمل پیکج" ہونا چاہیے۔

مختلف طریقے سے دیکھا جائے تو، سپر فوڈز ان غذائی اجزاء کو حاصل کرنے میں مدد کر سکتے ہیں جن کی خوراک میں کمی ہے، لیکن جسم کو مجموعی صحت اور لمبی عمر کے لیے اس کی ضرورت ہے۔ ان غذائی اجزاء میں، مثال کے طور پر، اومیگا 3 فیٹی ایسڈ، کیلشیم، فائبر، وٹامن ڈی، پوٹاشیم اور فائٹو کیمیکلز شامل ہیں۔

معروف امریکی ماہر نے دس غذاوں کی نشاندہی کی جو سپر فوڈز کے معیار پر پورا اترتی ہیں، جن کے بارے میں وہ مشورہ دیتی ہے کہ انہیں ضرور خوراک میں شامل کیا جانا چاہیے:

1. سالمن

مطالعے سے پتہ چلتا ہے کہ مچھلی کھانے کے بہت سے فوائد ہیں، خاص طور پر سالمن مچھلی جس میں اومیگا تھری فیٹی ایسڈز شامل ہیں، جو آپ کے دماغ کو بہترین طور پر صحت مند رکھتے ہیں۔ اور مطالعات کے نتائج اس بات کی تصدیق کرتے ہیں کہ مچھلی کھانے سے الزائمر کی بیماری کا خطرہ 20 فیصد کم ہوتا ہے۔ سمندری غذا کھانے سے بھی انسان کے افسردہ ہونے کا امکان کم ہوجاتا ہے۔

سالمن مچھلی
سالمن مچھلی

2. ایووکاڈو

ایووکاڈو میں دل کے لیے صحت بخش مونو سیچوریٹڈ چکنائی زیادہ ہوتی ہے۔ یہ 345 ملی گرام پوٹاشیم اور آنکھوں کے لیے صحت بخش کمپلیکس لیوٹین بھی فراہم کرتا ہے۔

ایووکاڈو
ایووکاڈو

3. السی اور چیا کے بیج

یہ چھوٹے لیکن طاقتور بیج ہیں جو طاقت اسے بھرپور ہوتے ہیں، اس میں موجود نباتاتی ذرائع پر مبنی اومیگا 3 فیٹی ایسڈ سوزش سے لڑنے میں مدد کرتا ہے۔ السی کے بیجوں میں لگننز بھی ہوتے ہیں، جو اینٹی آکسیڈنٹ فوائد فراہم کرتے ہیں۔ جبکہ چیا کے بیج فائبر سے بھرپور ہوتے ہیں، گلوٹین فری اور پروٹین کا ایک اچھا ذریعہ ہے۔

چیا کے بیج
چیا کے بیج

4. شکر قندی

ایک درمیانی شکر قندی میں 103 کیلوریز، 4 گرام فائبر اور بیٹا کیروٹین کی روزانہ تجویز کردہ مقدار سے چار گنا زیادہ ہوتی ہے۔ یہ جسم کی وٹامن سی کی 35 فیصد ضروریات کے ساتھ ساتھ مینگنیز بھی فراہم کرتی ہے، یہ ایک معدن ہے جو خون میں گلوکوز کو مستحکم رکھنے میں مدد کرتا ہے۔

شکر قندی
شکر قندی

5. بیریاں

بیری کی جلد میں گہرا نیلا رنگ انتھوسیاننز کی وجہ سے ہوتا ہے، جو پودوں کے روغن کی ایک قسم ہے جو کہ کئی صحت کے فوائد سے منسلک ہے جیسے کہ عمر سے وابستہ ذہنی کمزوری کو دور کرنے اور دل کی بیماری کے خطرے کو کم کرنے میں مدد کرنا۔ ایک کپ بیری میں 4 گرام فائبر کے ساتھ ساتھ وٹامن سی اور کے بھی ہوتے ہیں۔

بیریز
بیریز

6. سبز چائے

سبز چائے جاپان اور چین دونوں میں ہزاروں سالوں سے روایتی ادویات میں استعمال ہوتی رہی ہے۔ سبز چائے کے بہت سے فوائد میں اس کے پولیفینول شامل ہیں، ایک اینٹی آکسیڈینٹ جو کہ مطالعے سے ظاہر ہوتا ہے کہ دل کی حفاظت میں مدد کر سکتا ہے۔ جب آپ روزانہ 3 سے 5 کپ سبز چائے پیتے ہیں تو صحت کے لیےبے حد اہم فوائد حاصل ہوتے ہیں۔

7. چنے

غذائیت کے لحاظ سے، چنے پروٹین، فائبر، پوٹاشیم اور میگنیشیم سمیت فوائد سے بھرپور ہیں۔ اگرچہ پودوں کے پروٹین کی بہت سی شکلیں ہیں، چنے کو مکمل پروٹین ہونے کا اعزاز حاصل ہے، جس کا مطلب ہے کہ ان میں تمام نو ضروری امینو ایسڈ ہوتے ہیں۔

8. سبز پتوں والی سبزیاں

پتوں والی سبزیاں، جیسے پالک یا سرسوں کا ساگ، آئرن، فولک ایسڈ، وٹامن اے اور آئسوتھیوسائنیٹس سمیت بہت سارے غذائی اجزاء فراہم کرتے ہیں، جو جسم کو کارسنوجنز سے نجات دلانے میں مدد کرتے ہیں۔ پتوں والی سبزیوں میں وٹامن کے بھی ہوتا ہے، جو خون کے جمنے کے لیے ضروری ہے اور ہڈیوں کی صحت کے لیے بھی ضروری ہے، لیکن اگر کوئی شخص خون پتلا کرنے والی ادویات لے رہا ہو تو اسے محدود مقدار میں کھانی چاہئیں۔

9. کمچی

کمچی آنتوں کے لیے مفید پروبائیوٹکس کا ایک بھرپور ذریعہ ہے، اس میں دماغ کے لیے مفید غذائی اجزاء جیسے کولین شامل ہیں۔ کمچی گوبھی، ہری پیاز اور بعض اوقات مولیوں کے ساتھ بنائی جاتی ہے، اور اسے لہسن، ادرک اور مرچوں سے ذائقہ دیا جاتا ہے۔

10. دہی

جب ملٹی ٹاسک کرنے والے اجزا کی بات آتی ہے تو دہی سب سے اوپر آتا ہے۔ دہی میں ہڈیوں کی تعمیر کرنے والا کیلشیم، وٹامن ڈی، پٹھوں کو سہارا دینے والا پروٹین اور پوٹاشیم ہوتا ہے۔ سادہ دہی فی 1/2 کپ سرونگ میں 6 گرام پروٹین فراہم کرتا ہے، جبکہ یونانی دہی فی سرونگ 13 سے 15 گرام پروٹین فراہم کرتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں