اردنی شہری نے بیٹے کو ڈوبنے سے بچانے کے لیے جان قربان کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

دل کو چھو لینے والی کہانی میں اردن کے ایک شہری نے اپنے بیٹے کو موت سے بچانے کے لیے اپنی جان قربان کر دی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کو حاصل ہونے والی تفصیلات کے مطابق ندال حمد الحمران سلطنت عمان میں صلالہ شہر میں اس وقت ڈوب کر ہلاک ہو گیا جب وہ اپنے ساتھیوں کے ایک گروپ کے ساتھ شکار کے سفر پر نکلا تھا۔ اس سفر میں ان کا جوان بیٹا حماد بھی ساتھ تھا۔

جب وہ سمندر کے قریب ایک چٹان پر تھے تو 13 سال کا حماد پھسل کر پانی میں گر گیا۔ حماد پانی میں درمیانی لہروں کے درمیان گرا۔ والد نے فوری طور پر پانی میں چھلانگ لگائی بہت دور تک تیر کر اپنے بیٹے کو اٹھا کر پانی سے خشکی تک لے آیا۔

لیکن اس دوران اس کے ہاتھ میں فریکچر آگیا۔ اس فریکچر نے اسے ٹھیک سے تیرنے سے روک دیا اور وہ سمندر کے پانی میں ڈوب کر جان کی بازی ہار گیا۔

ندال کے ایک ساتھی نے انکشاف کیا کہ ان کے اہل خانہ نے انہیں سلطنت عمان میں سلالہ میں دفن کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اردن میں ان کے لیے جنازہ گاہ کھولی جائے گی۔ اردنی کمیونٹی کے سوشل کلب کی سلطنت عمان میں دوہفر گورنریٹ برانچ نے ندال کی ناگہانی موت پر سوگ کا اظہار کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں