جاپان میں گرمی کے توڑ کے لیےٹھنڈے کپڑے اوردیگر لوازمات جن کےبارے میں لوگ کم جانتے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

دنیا بھر کی طرح جاپان میں بھی گرمی کی لہرمیں شدت آنےکےبعد ملبوسات تیار کرنے والی کمپنیوں نے گرمی کا توڑ کرنے والے کپڑے تیار کرنا شروع کیے ہیں۔

درجہ حرارت میں اضافے کے ساتھ، جاپان میں ٹھنڈے کپڑوں اوردیگر لوازمات استعمال کی مانگ بڑھ جاتی ہے۔ چھوٹے پنکھے والی جیکٹس، ریکوری کو بڑھانے والے کپڑوں سے بنی قمیضیں، جسم کے درجہ حرارت کو کم کرنے کے لیے کالر کے گرد لگائی گئی ٹیوبیں اور کئی دوسرے آئیڈیاز سے تیار کردہ کپڑے شامل ہیں۔ان کا مقصد صرف ایک ہے اور وہ ملک میں ماحول کو ہوا دینے والی گرمی کی لہروں کا مقابلہ کرنا ہے۔

کئی ممالک کی طرح جاپان کو بھی گلوبل وارمنگ کے اثرات کا سامنا ہے اور گذشتہ جولائی سے اب تک کا سب سے زیادہ درجہ حرارت چارلیس درجے سینٹی گریڈ ریکارڈ کیا گیا۔اس کے ساتھ نمی کی مقدار بھی بڑھ گئی۔ گرمی کی وجہ سے جاپان میں تقریباً 36,000 افراد متاثر ہوئے۔ جاپان کے فائر اینڈ ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایجنسی کے مطابق اسپتال میں داخل اور تقریباً 40 افراد اسپتال میں داخل ہیں۔

جاپان میں ٹھنڈے کپڑے
جاپان میں ٹھنڈے کپڑے

عملی حل

ان سخت موسمی حالات نے جاپانیوں کو گرمی کے مسئلے کے مختلف حل تلاش کرنے پر آمادہ کیا، جن میں ایسے کپڑے اور لوازمات شامل ہیں جو کولنگ سسٹم سے لیس ہوتے ہیں جیسے کہ کمر کے نچلے حصے میں نصب چھوٹے پنکھوں سے منسلک جیکٹس۔

یہ جیکٹس عموما گرمی میں کام کرنے والے ورکرز کے لیے ہے۔ ورک مین کمپنی جو کام کے کپڑے تیار کرتی نے 2020 میں دو پنکھوں کے ساتھ اپنی جیکٹ کا ایک عوامی ورژن لانچ کیا، جس کی قیمت 82 سے لے کر 165 امریکی ڈالر تک ہے۔ قیمت میں فرق اس جیکٹ کے ساتھ فراہم کی جانے والی ریچارج ایبل بیٹریوں کے مختلف ماڈلزکی وجہ سے ہے۔ ایک اور جاپانی کمپنی چکوما نے کام کی جگہوں پر پہنے جانے والے یونیفارم میں چھوٹے پنکھے شامل کیے جو کام کے اوقات میں غیر رسمی لباس کو اپنانے کی اجازت نہیں دیتے۔

جاپان میں گرمی کے مارے افراد جھتریوں سے اپنے آپ کو دھوپ سے بچاتے ہوئے
جاپان میں گرمی کے مارے افراد جھتریوں سے اپنے آپ کو دھوپ سے بچاتے ہوئے

نئےآئیڈیاز

گرمی کی لہر کا سامنا کرنے کے لیے نئے آئیڈیاز میں MI Creations نے رنگین اور آئسڈ ٹیوبیں متعارف کرائیں جو جسم کے اس حصے کی شریانوں کو ٹھنڈا کرنے کے لیے گردن کے گرد لگائی جاتی ہیں۔ اس کے نتیجے میں ہائپوتھرمیا متاثر ہوتا ہے۔ ان ٹیوبوں کا اندرونی حصہ پینٹاگونل شکل اختیار کرتا ہے، جس کی وجہ سے وہ تمام کالر سائز میں فٹ ہو جاتے ہیں۔ اس میں ایک مائع ہوتا ہے جو اس وقت جم جاتا ہے جب اس کا درجہ حرارت 18 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ جاتا ہے، جو کہ مستقل اور معتدل درجہ حرارت کو برقرار رکھنے کو یقینی بناتا ہے جس سے جسم کو تازگی ملتی ہے۔

اس تناظر میں لائبریٹا نے تازگی بخش اثر کے ساتھ مواد سے بنے کپڑے لانچ کیے جن میں نامیاتی مرکبات ہوتے ہیں جو پانی یا پسینے کے ساتھ تعامل کرتے وقت تازگی کا احساس دیتے ہیں۔ اس ایجاد کے ذریعے وہ اپنی فروخت کی تعداد میں نمایاں اضافہ ریکارڈ کرنے میں کامیاب رہی۔
مرد چھتریاں اٹھائے ہوئے ہیں۔

اگرچہ بہت سے صارفین گرمی کی لہر کا سامنا کرنے کے لیے نئے اور جدید طریقوں کا سہارا لیتے ہیں، لیکن ان میں سے کچھ اب بھی روایتی حل جیسے چھتریوں کو ترجیح دیتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں