مدینہ منورہ میں دماغ سے کولائیڈل سسٹ نکال کر مریضہ کی جان بچا لی گئی

مریضہ مکمل طور پر ہوش میں آگئی اور اسے کنگ فہد ہسپتال سے فارغ کردیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں کنگ فہد ہسپتال کی طبی ٹیموں نے مدینہ منورہ میں دماغی نکسیر، شدید ہائیڈروسیفالس اور وینٹریکولر ڈیلیٹیشن میں مبتلا ایک خاتون کے دماغ سے کولائیڈل سسٹ نکال کر اسے بچانے میں کامیابی حاصل کرلی۔ حیرت انگیز طور پر مریضہ کی کھوپڑی کو کھولے بغیر دماغ سے کولائیڈل سسٹ نکالا گیا۔

40 کی دہائی کی عمر کی خاتون کو ہلال احمر والوں نے مدینہ منورہ کے کنگ فہد ہسپتال کی ایمرجنسی میں پہنچایا۔ اس خاتون کے ضروری طبی معائنے اور ایکسرے کرانے کے بعد پتہ چلا کہ ایک کولائیڈ سسٹ ہے جس کی وجہ سے دماغ میں تیسرے وینٹریکل میں رکاوٹ پیدا ہو گئی ہے۔ اسی وجہ سے وینٹریکلز کی توسیع اور ان کے درمیان شدید خون بہنے کے باعث ہائیڈروسیفالس سسٹ بن گیا ہے اور خون کے بہاؤ میں اضافہ ہو گیا ہے۔

مدینہ منورہ ہیلتھ کاکس نے بتایا کہ خون کے بہاؤ کو درست کرنے کے بعد عورت کو آپریشن تھیٹر منتقل کیا گیا اور وہاں اینڈو سکوپی کرکے کھوپڑی میں سوراخ کرکے کولائیڈل سسٹ کو نکالنے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس طرح بغیر کسی وسیع جراحی کی ضرورت کے خاص مقام پر بننے والے ’’سسٹ‘‘ کو اینڈو سکوپی کے ذریعہ نکال لیا گیا۔ مریض کے دماغ کے وینٹریکلز اپنے معمول پر آنے کی یقین دہانی کے بعد اور اس کے مکمل ہوش میں آنے کے بعد اسے اچھی صحت کی حالت میں ہسپتال سے فارغ کردیا گیا۔ یاد رہے مدینہ منورہ کے کنگ فہد ہسپتال نے سال 2023 کی پہلی ششماہی کے دوران 3 ہزار 103 سرجریز کی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں